The news is by your side.

منی لانڈرنگ کیس: ایف آئی اے کی ایم کیو ایم کے دو وفاقی وزرا سے تفتیش

اسلام آباد: ایف آئی اے نے منی لانڈرنگ کیس میں دو وفاقی وزرا سے پوچھ گچھ کی ہے.

تفصیلات کے مطابق آج ایم کیو ایم سے تعلق رکھنے والے دو وفاقی وزرا منی لانڈرنگ کیس میں ایف آئی اے ٹیم کے سامنے پیش ہوئے.

وفاقی وزیر برائے انفارمیشن اینڈ ٹیکنالوجی خالد مقبول صدیقی اور وفاقی وزیر برائے قانون و انصاف فروغ نسیم  سے آج ایف آئی دفتر میں دو گھنٹے تفتیش ہوئی.

دونوں وزرا پر ایم کیو ایم کے ذیلی فلاحی ادارے خدمت خلق فاؤنڈیشن میں پیسے جمع کروانے کا الزام ہے، خدمت خلق فاؤنڈیشن کے بارے میں ذرائع کا دعویٰ ہے کہ اس سے لندن سیکریٹریٹ کے اخراجات بھی برداشت کیے جاتے تھے.


مزید پڑھیں: خدمت خلق فاؤنڈیشن کے نام پر منی لانڈرنگ: میئر سمیت 726 افراد کی فہرست جاری


خالد مقبول صدیقی اس وقت ایم کیوایم پاکستان کے سربراہ ہیں، جب کہ بیرسٹر فروغ نسیم پارٹی رہنما ہیں اور اس وقت سینیٹر ہیں.

واضح رہے کہ ایف آئی اے نے متحدہ قومی موومنٹ کے فلاحی ادارے خدمت خلق فاؤنڈیشن میں منی لانڈرنگ میں ملوث میئر کراچی وسیم اختر سمیت 726 افراد کے ناموں کی فہرست جاری کی ہے۔

یاد رہے کہ خدمت خلق فاؤنڈیشن کے خلاف منی لانڈرنگ کا مقدمہ 2017 میں کراچی میں درج ہوا تھا.

Comments

یہ بھی پڑھیں