تقریبات میں تاخیر سے اسٹریٹ کرائم میں اضافہ ہوا، فردوس شمیم -
The news is by your side.

Advertisement

تقریبات میں تاخیر سے اسٹریٹ کرائم میں اضافہ ہوا، فردوس شمیم

کراچی: وزیرِ اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کو اپوزیشن لیڈر فردوس شمیم نے خط لکھ کر درخواست کی ہے کہ شہرِ قائد میں شادی ہالز میں تقریبات کا وقت 11 بجے تک کیا جائے۔

تفصیلات کے مطابق سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر فردوس شمیم نے ایک خط کے ذریعے اسٹریٹ کرائمز کے حوالے سے وزیرِ اعلیٰ کو ایک اہم مسئلے کی طرف راغب کیا۔

شادی کی تقریبات میں ون ڈش کے احکامات سے عام آدمی کو فائدہ پہنچے گا: فردوس شمیم

فردوس شمیم نقوی نے لکھا کہ تقریبات میں تاخیر سے اسٹریٹ کرائم میں اضافہ ہوا، آئی جی سندھ ڈاکٹر کلیم امام نے بھی اس کا ذکر پریس کانفرنس میں کیا ہے۔

اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ شادی کی تقریبات میں ون ڈش کا حکم جاری ہوا، ون ڈش کے احکامات سے عام آدمی کو فائدہ پہنچے گا، عام لوگوں کے فائدے کے لیے احکامات جاری کریں۔

پی ٹی آئی رہنما فردوس شمیم نے مزید کہا کہ اگر ہمارا ساتھ درکار ہوگا تو ہم وزیرِ اعلیٰ سندھ کے ساتھ ہیں۔


یہ بھی پڑھیں:  اسٹریٹ کرائم کے خاتمے کیلئے سندھ حکومت اہم اقدامات کرے گی، مراد علی شاہ


خیال رہے کہ وزیرِ اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے بھی کہا تھا کہ شہر میں اسٹریٹ کرائمز کو کنٹرول کرنے اور اس کے خاتمے کے لیے سندھ حکومت اہم اقدامات کرے گی۔

ان کا کہنا تھا کہ اسٹریٹ کرائمز کی ذمہ دار پولیس ہوتی ہے، پچھلے دو سے 3 ماہ پولیس کسی اور کام میں مصروف رہی لیکن اب کراچی میں پولیس کے ذریعے ہی اسٹریٹ کرائم میں کمی آئے گی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں