The news is by your side.

Advertisement

جرمن پارلیمنٹ میں پہلی بارمسلمان خاتون اسپیکرمنتخب

برلن: مہتریم آراس کو بدھ کی روز جرمنی ریاست کی پہلی مسلمان خاتون اسپیکر منتخب کر لیاگیا،ان کا کہنا تھا کہ باڈن ورٹمبرگ میں ووٹرز نے تاریخ رقم کردی.

تفصیلات کے مطابق پہلی مسلمان خاتون مہتریم آراس کو پارلیمنٹ کی اسپیکرمنتخب کر لیاگیا، مسلم خاتون نے ووٹرز کےاس فیصلے کی تعریف کرتے ہوئے اسے تاریخی واقعہ قراردیا.

مہتریم آراس کا تعلق گرین پارٹی سے ہے اور انہوں نے باڈن ورٹمبرگ میں بدھ کے روز مقبول امیگریشن مخالف پارٹی کے رکن کو مقابلے کے بعد شکست دی. ان کا کہنا تھا کہ آج ہم نےتاریخ رقم کردی .

German-post-1

نومنتخب اسپیکر 50 سالہ مہتریم آراس کا کہنا تھا کہ ان کی کامیابی نے رواداری ، آزادی اور برداشت کا پیغام دیا ہے.

German-post-2

مہتریم آراس ترکی میں پیدا ہوئی، وہ اپنے والدین کے ہمراہ بچپن میں ہی جرمنی منتقل ہوگئی، انہوں نے معاشیات میں تعلیم حاصل کی، جس کے بعد مسلم خاتون نے اپنی ٹیکس مشورہ فرم کی بنیاد رکھی.

مہتریم نے سیاسی کیریئر کا آغاز 1992 میں گرین پارٹی سے کیا اور مقامی کونسل کی رکن منتخب ہوئی، کامیاب سیاسی سفر طے کرتے ہوئے وہ جرمنی کی پارلمینٹ کی رکن بنی.

*پاکستانی نژاد صادق خان لندن کے پہلے مسلمان میئرمنتخب

 الیکشن سے ایک دن قبل ریلوے اسٹیشن پر ایک شخص نے اللہ اکبر کا نعرہ لگا کر چار لوگوں کو چاقو کے وار کرکے زخمی کردیا،جس سے مذہبی صورتحال کشیدہ ہوگئی.تاہم اس واقعے کا ان کی کامیابی پر کوئی اثر نہیں ہوا.

جرمنی میں جمعرات کے روز ایک سروے جاری کیا گیا جس میں 60 فیصد لوگوں کا کہنا تھا کہ اسلام کا جرمنی سے کوئی تعلق نہیں ہے جبکہ 34 فیصد لوگوں نے اس بات سے اتقاف کیا کہ مذہب جرمنی کا حصہ ہے.

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں