The news is by your side.

Advertisement

فائیو جی انٹرنیٹ کی دنگ کردینے والی رفتار سامنے آگئی

واشنگٹن: فائیو جی انٹرنیٹ کی دنگ کردینے والی رفتار سامنے آگئی، امریکا میں فائیوجی انٹرنیٹ اسپیڈ ایک ہزار میگا بائٹ فی سیکنڈ تک پہنچ گئی۔

تفصیلات کے مطابق جدید ترین فائیو جی ٹیکنالوجی اس وقت جنوبی کوریا، امریکا اور چین کے مختلف حصوں میں صارفین کو دستیاب ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اس کی رفتار واقعی موجودہ موبائل انٹرنیٹ کنکشن سے سوگنا جبکہ گھروں کے براڈ بینڈ کنکشن سے 10 گنا تیز ہے۔

میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ ویسے تو دنیا بھر میں کروڑوں افراد کو اس ٹیکنالوجی تک رسائی میں کئی سال درکار ہوں گے مگر ٹوئٹر پر فائیو جی ٹیکنالوجی کی رفتار کی ایک ویڈیو گذشتہ دنوں وائرل ہوئی جو کہ امریکی شہر شکاگو میں ایک شخص نے ویرائزن کے فائیو جی نیٹ ورک پر سام سنگ گلیکسی ایس 10 فائیو جی کی آزمائش کی۔

فون میں انٹرنیٹ اسپیڈ ٹیسٹ ایپ میں فائیو جی انٹرنیٹ اسپیڈ ایک ہزار میگا بائٹ فی سیکنڈ تک پہنچ گئی اور عام طور پر گھروں یا دفاتر میں وائی فائی کی رفتار 100 میگا بٹ فی سیکنڈ تک بمشکل پہنچ پاتی ہے۔

خیال رہے کہ جنوبی کوریا گزشتہ ماہ سے فائیو جی نیٹ ورک استعمال کرنے والا دنیا کا اّولین ملک بنا، یہ نیٹ ورک فور جی سے بیس گنا تیز رفتار ہے۔ صارفین ایک مکمل فلم محض ایک سیکنڈ سے بھی کم وقت میں ڈاؤن لوڈ کر سکتے ہیں۔

فائیو جی ٹیکنالوجی 2020 تک متعارف کرائی جائے گی

ایک اندازے کے مطابق 2024 میں دنیا کی چالیس فیصد آبادی فائیو جی ٹیکنالوجی استعمال کرے گی۔ کئی دیگر اندازوں کے مطابق سن 2034 تک عالمی سطح پر فائیو جی نیٹ ورک مستعمل ہو جائے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں