The news is by your side.

Advertisement

پائلٹوں کا انکار، عراق سے پاکستانیوں کو واپس لانے والی پرواز منسوخ

وبا کے حوالے سے 100 فی صد قانون پر عمل لازم ہے جو نہیں ہو رہا: جنرل سیکریٹری پالپا

کراچی: پی آئی اے کے پائلٹوں کے انکار کے باعث عراق میں پھنسے پاکستانیوں کو واپس لانے کے لیے جانے والی پرواز منسوخ ہو گئی۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق پی آئی اے کی عراق سے پاکستانیوں کو واپس لانے والی پرواز پی کے 9814 منسوخ ہو گئی، پائلٹوں نے جانے سے انکار کر دیا، قومی ایئر لائن کے سی ای او کی جانب سے پائلٹوں کو یقین دہانی اور حفاظتی سوٹ کی فراہمی کے باوجود پالپا کے دباؤ پر انھوں نے پرواز لے جانے سے انکار کر دیا۔

ادھر وطن واپسی کے لیے 161 پاکستانی عراق کے مختلف شہروں سے بغداد میں جمع ہوئے ہیں، جو پاکستان سے جانے والی پرواز کے منتظر ہیں، تاہم اب وہ پائلٹوں کی تنظیم کے اختلافات کے باعث مزید پریشانی کا شکار ہو گئے ہیں۔

پائلٹوں کو فراہم کیا گیا کرونا وائرس سے بچانے والا حفاظتی سامان: تصویر اے آر وائی نیوز

مالی مشکلات کا شکار پی آئی اے کی 2 ماہ کے لیے تنخواہ کٹوتی کے معاملے پر پائلٹس تنظیم کے اختلافات سامنے آئے ہیں، پی آئی اے کے سی ای او ارشد ملک نے اپنی تنخواہ سے بھی 20 فی صد کٹوتی کا اعلان کیا تھا، جس کے بعد قومی ایئر لائن کی تمام انتظامیہ نے بھی تنخواہ کٹوتی کا اعلان کیا، دوسری طرف پالپا نے انتظامیہ کو تنخواہ کٹوتی کر کے پالپا فنڈ میں جمع کروانے سے متعلق خط لکھا تاہم انتظامیہ نے اسے نہیں مانا۔

تاشقند اور بغداد میں پھنسے پاکستانیوں کی واپسی کے لیے خصوصی پروازیں

یاد رہے کہ سی ای او پی آئی اے نے ایک روز قبل پائلٹس اور کریو کو قومی ہیرو قرار دیا تھا۔

پائلٹس کی تنظیم پالپا کے جنرل سیکریٹری نے اس سلسلے میں اے آر وائی نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا جو قانون بنائے گئے ہیں ان پر عمل نہیں ہو رہا، وبا کے حوالے سے 100 فی صد قانون پر عمل لازم ہے، ہم اس وقت وبا کے خلاف لائن آف فائر میں ہیں، ہمارا مؤقف ہے حفاظتی قوانین پر عمل ہی نہیں کیا جا رہا، ہمیں اپنی ذمے داریوں سے بڑھ کر کردار ادا کرنا ہوگا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں