The news is by your side.

Advertisement

فلوریڈا : انشورنس کے لئے والد کا قتل کرنے والی بیٹی

ڈیلینڈ : فلوریڈا میں ایک عورت نے انشورنس کی رقم ہتھیانے کیلئے اپنے سوتیلے باپ کو اپنے دوست کے ذریعے قتل کروادیا، پولیس نے ڈیڑھ سال بعد قتل کا معمہ حل کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق فلوریڈا پولیس نے ڈیڑھ سال قبل ایک اندھے قتل کا معمہ حل کرکے قاتل اور اس کے ساتھی کیخلاف کاروائی کا آغاز کردیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ فلوریڈا کی رہائشی خاتون نے اپنے سوتیلے والد کی انشورنس رقم ہتھیانے کے لیے انہیں قتل کروایا تھا۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق پولیس کا کہنا ہے کہ ایک خاتون نے مبینہ طور پر کسی کو اپنے سوتیلے باپ کو گولی مارنے کے لئے رقم کی ادائیگی کی تاکہ وہ انشورنس کمپنی سے سوتیلے والد کی رقم وصول کرسکے جو25،000 سے بڑھا کر 750،000 ڈالر کردی گئی تھی۔

پولیس کے مطابق31جنوری2019 کو59سالہ ٹیرنس گبسن یوکلیڈ ایوینیو پر موجود تھا، اس وقت ایک نقاب پوش مسلح شخص نے اس پر حملہ کیا اور فائرنگ کرکے ٹیرنس گبسن کو موت کے گھاٹ اتار دیا اور باآسانی فرار ہوگیا۔

اس وقت بظاہر پولیس کو بھی یہ واقعہ اسٹریٹ کرائم یا رہزنی کا لگا لیکن مختلف زاویوں سے تفتیش کے بعد پولیس ڈیڑھ سال بعد اس نتیجے پر پہنچی کہ گبسن کو اس کی سوتیلی بیٹی میشا ولیمز نے اجرتی قاتل کے ذریعے مروایا تھا۔

خبر رساں ادارے کے مطابق31سالہ میشا ولیمز پر پولیس نے قتل کا الزام عائد کیا ہے، تفتیش کاروں کا کہنا ہے کہ میشا ولیمز نے اپنے بوائے فرینڈ 43سالہ اپوپکا کے ذریعے واردات کروائی ہے پولیس نے اس کو بھی شامل تفتیش کرلیا ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں