The news is by your side.

Advertisement

جدید ٹیکنالوجی خصوصاً زراعت میں چین کے تجربے سے فائدہ اٹھانا چاہتے ہیں: شاہ محمود قریشی

بیجنگ: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ پاکستان چاہتا ہے کہ جدید ٹیکنالوجی بالخصوص زراعت کے شعبے میں چین کے تجربے سے فائدہ اٹھائے۔

تفصیلات کے مطابق ایک انٹرویو میں وزیر خارجہ نے چین کے جدید ٹیکنالوجی تجربات سے مستفید ہونے کی بات کرتے ہوئے کہا کہ پاک چین شراکت داری کا مقصد چین کے تجربے سے غربت میں کمی کے اقدامات سیکھنا ہے۔

انھوں نے کہا کہ پاکستان اور چین کے درمیان اقتصادی تعاون بڑھ رہا ہے، سی پیک اور اقتصادی راہ داری باہمی تعاون کے سلسلے میں اہم کردار ادا کر رہے ہیں۔

شاہ محمود کا کہنا تھا کہ چین کی سرمایہ کاری اقتصادی شراکت داری بڑھانے میں اپنا اہم کردار ادا کر رہی ہے، یہ شراکت داری صرف دو طرفہ نہیں بلکہ پورے خطے کی بہتری اور ترقی کے لیے ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی چین کے نائب صدر سے ملاقات

خیال رہے کہ شاہ محمود قریشی تین روزہ دورے پر چین میں ہیں، وہ چین پاکستان اقتصادی راہ داری سمیت باہمی دل چسپی کے اہم معاملات پر تبادلۂ خیال کے لیے پاکستان چین تزویراتی مکالمے میں شرکت کرنے گئے ہیں۔

گزشتہ روز وزیر خارجہ نے چین کے نائب صدر وانگ قشن سے ملاقات کے دوران کہا تھا کہ چین کی کرپشن کی روک تھام کے لیے کوششیں قابل تعریف ہیں، پاکستان چین کے تجربات سے استفادہ کرے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں