The news is by your side.

Advertisement

امریکا میں 5 افراد پر فردِ جرم عائد ، پاکستان کا بیان سامنے آگیا

اسلام آباد : پاکستانی دفترخارجہ کے ترجمان نے امریکی اداروں کی جانب سے  برآمدات بھیجنےوالے5افرادپرفرد جرم عائدکرنے کے معاملے پر کہا کہ امریکا نے سرکاری سطح پرہمیں کوئی اطلاع فراہم نہیں کی۔

تفصیلات کے مطابق امریکی اداروں کی پاکستان کو برآمدات بھیجنے والے 5 افراد پر فردجرم عائد کرنے کے معاملے پر ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ 5افرادپرفرد جرم عائدکرنےکی رپورٹس دیکھیں، پاکستانی ادارے مبینہ طور پر امریکی محکمہ تجارت کی فہرست میں شامل ہیں، امریکا نے سرکاری سطح پر ہمیں کوئی اطلاع فراہم نہیں کی۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ جن افراد پر فرد جرم عائد کی گئی ان کی شناخت نہیں بتائی گئی، امریکا نے ہم سے حقائق جاننےکی بھی کوشش نہیں کی، اس لئے بغیر تفصیلات معاملے پر تبصرہ کرنے سے قاصرہیں۔

دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ ماضی میں بھی محض شک پر پاکستانی اداروں پرپابندیاں لگائی گئیں، کئی بار اشیا کی ممنوعہ فہرست میں عدم موجودگی پر بھی ایسا طرزعمل اپنایاگیا، ماضی میں سماجی واقتصادی ترقی کیلئے اشیا بھجوانے پر بھی پابندی لگائی گئی۔

انھوں نے مزید کہا کہ پاکستان کی سماجی ومعاشی ترقی کیلئے آلات، ٹیکنالوجی کا حصول ناگزیرہے، یہ ممکن ہے کچھ اشیا دہرے استعمال کے زمرے میں آتی ہوں، دہرے استعمال کی اشیا پر دستاویزی ضرورتیں پوری کی جائیں گی اور ہر قسم کے غلط استعمال کی روک تھام کی یقین دہانی کرائیں گے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ امریکا کو خطے میں ٹیکنالوجیز کی فراہمی میں توازن قائم کرنا ہوگا، خطے میں ایک ملک کو حساس ٹیکنالوجیزتک رسائی، رعائتیں دی جا رہی ہیں، وہ ملک جدید فوجی ہتھیار بنا کر جنوبی ایشیا کے تذویراتی استحکام کیلئے خطرہ بن چکا ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں