The news is by your side.

Advertisement

امریکی صدرکی دعوت پر وزیراعظم 21 جولائی کو امریکہ جائیں گے، ڈاکٹر فیصل

کلبھوشن یادیو کیس میں 17جولائی کو فیصلہ آئےگا

اسلام آباد : ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر فیصل نے کہا امریکی صدرکی دعوت پر وزیراعظم 21 جولائی کو امریکہ جائیں گے، پاکستان نے کرتار پوررہداری پر 80فیصد کام مکمل کرلیا، بھارت نے کتنا کیامعلوم نہیں۔

تفصیلات کے مطابق ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر فیصل نے میڈیا بریفنگ دیتے ہوئے کہا مقبوضہ کشمیرمیں بھارت کی وحشیانہ بربریت جاری ہے، بھارتی قابض افواج کے ہاتھوں مزید ایک کشمیری شہید ہوگیا۔

ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا یواین انسانی حقوق کمیشن کی دوسری رپورٹ کاخیرمقدم کرتے ہیں، رپورٹ مقبوضہ کشمیرمیں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا ثبوت ہے، عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں بند کرائے اور بھارت کو نہتے کشمیریوں پر مظالم سے روکے۔

یواین انسانی حقوق کمیشن کی دوسری رپورٹ کاخیرمقدم کرتےہیں

وزیراعظم کے دورہ امریکہ کے حوالے سے ڈاکٹر فیصل نے کہا امریکی صدرکی دعوت پر وزیراعظم عمران خان 21 سے 23 جولائی کو امریکہ جائیں گے، وزیراعظم کے امریکی دورے سے متعلق تفصیل دی جاچکی ہے اور وزیراعظم امریکا میں رکنے کا بیان خود بھی دے چکے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ کرتارپور راہداری پر 14جولائی کو مذاکرات ہوں گے ، پاکستان نے 80 فیصد کام مکمل کرلیا، بھارت نے کتنا کیا نہیں معلوم، کرتارپور راہداری معاہدے کی تفصیل ابھی سامنے نہیں لائی جاسکتی۔

کرتارپور راہداری پر 14جولائی کو مذاکرات ہوں گے

ترجمان نے مزید کہا دوحہ مذاکرات جاری ہیں، پاکستان اپنامثبت کردار ادا کرتا رہےگا، کلبھوشن یادیو کیس میں 17جولائی کو فیصلہ آئے گا۔

ڈاکٹر فیصل کا کہنا تھا کھیلوں کوسیاست کیلئےاستعمال نہیں کرنا چاہیے، پاکستان نے کھیلوں کو سیاست کیلئے استعمال پر احتجاج کیا ہے، پاکستان شمالی کوریا پر عائد پابندیوں پر مکمل عملدرآمد کررہا ہے، کسی شمالی کوریا کے شہری کو پاکستانی ویزہ جاری نہیں کیاگیا۔

دفتر خارجہ کے ترجمان نے کہا پاکستان چاہتا ہے ایران کے جوہری مسئلے کا پر امن حل نکالا جائے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں