The news is by your side.

Advertisement

خیبر پختونخواہ فوڈ سیکیورٹی کی پالیسی بنانے والا پہلا صوبہ بن گیا

پشاور: ملکی تاریخ میں پہلی بار صوبہ خیبر پختونخواہ فوڈ سیکیورٹی پالیسی بنانے والا پہلا صوبہ بن گیا، پالیسی کی منظوری جلد کابینہ اجلاس میں دی جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق صوبہ خیبر پختونخواہ ملک میں فوڈ سیکیورٹی کی پالیسی بنانے والا پہلا صوبہ بن گیا، پختونخواہ فوڈ سیکیورٹی پالیسی کی منظوری پیر کو کابینہ اجلاس میں دی جائے گی۔

دستاویزات کے مطابق فوڈ سیکیورٹی پالیسی پر عمل کے لیے 3 مختلف پلان مرتب کیے گئے ہیں، قلیل مدتی پلان 2 سے 3 سالوں پر محیط ہوگا اور اس کا تخمینہ 56 ارب ہے۔

دستاویزات میں کہا گیا ہے کہ وسط مدتی پلان 4 سے 7 سالوں پر محیط ہوگا اس کا تخمینہ 109 ارب ہے جبکہ طویل مدتی پلان 8 سے 10 سال پر محیط ہوگا اور اس کا تخمینہ 70 ارب ہے۔

پختونخواہ میں زرعی پیداوار بڑھانے کے لیے 19 مختلف اقدامات تجویز کیے گئے ہیں، وسط مدتی پلان کے تحت 24 مختلف اقدامات میں چھوٹے ڈیموں کی تعمیر، موجودہ ڈیموں کی مرمت کےعلاوہ کمانڈ ایریاز کی توسیع اور اقدامات بھی شامل ہیں۔

دستاویزات میں کہا گیا کہ طویل مدتی پلان کے تحت بڑے ڈیموں کی تعمیر، زیتون کی کاشت اور دیگر اقدامات شامل ہیں، زراعت اور آبپاشی سمیت اور متعلقہ محکموں کی ذمے داریوں کا تعین کیا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں