The news is by your side.

کیا فیفا ورلڈ کپ کے بعد قطر ان شاندار اسٹیڈیمز کو مسمار کردے گا؟

18 دسمبر کو قطر میں جاری فیفا فٹبال ورلڈکپ کا اختتام ہوجائے گا مگر اس ایونٹ کے لیے تیار کیے جانے والے اسٹیڈیمز کا مستقبل کیا ہوگا؟

قطر میں جاری فیفا ولڈ کپ کے لیے مجموعی طور پر 8 اسٹیڈیم استعمال کیے گئے ہیں جن میں سے 7 کو مکمل طور پر تعمیر کیا گیا جبکہ خلیفہ انٹرنیشنل اسٹیڈیم پہلے سے موجود تھا۔

قطر نے اسٹیڈیمز کے حوالے سے پہلے سے منصوبہ بندی کی ہوئی ہے۔

اسٹیڈیم 974 پہلا فٹبال اسٹیڈیم تھا جسے کنٹینرز سے تعمیر کیا گیا تھا لیگو بلاکس سے متاثر اس اسٹیڈیم کی تیاری کے لیے 974 شپنگ کنٹینرز استعمال کیے گئے ہیں۔

فٹبال ورلڈ کپ ختم ہونے کے بعد اب اس کے لیے استعمال ہونے والے شپنگ کنٹینرز اور نشستوں کو ہٹادیا جائے گا لیکن ابھی واضح نہیں کہ یہ عمل کب شروع ہوگا۔

احمد بن علی اسٹیڈیم اور الجنوب اسٹیڈیم مقامی فٹبال کلبوں کے لیے مختص کردیے جائیں گے، اس اسٹیڈیم کو الریان کلب کا مرکز بنایا جائے گا جبکہ الورقہ کلب الجنوب اسٹیڈیم میں کھیلے گا۔

لوسیل اسٹیڈیم میں ورلڈکپ کا فائنل ہوگا اور ٹورنامنٹ کے اختتام پر اس اسٹیڈیم کو ایک کمیونٹی مرکز میں تبدیل کردیا جائے گا، جس میں اسکول، دکانیں، کیفے، طبی مراکز اور دیگر سہولیات موجود ہوں گی۔

البیت اسٹیڈیم کو فائیو اسٹار ہوٹل، شاپنگ مال اور اسپورٹس میڈیسین سینٹر میں تبدیل کردیا جائے گا۔

خلیفہ انٹرنیشنل اسٹیڈیم مستقبل میں بھی عالمی فٹبال مقابلوں کے لیے استعمال کیا جائے گا اور 2026 کے ورلڈکپ کوالیفائنگ مقابلوں کا انعقاد وہاں ہوگا۔

کچھ اسٹیڈیمز کو جنوری 2024 میں شیڈول ایشیا کپ کے لیے استعمال کیا جائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں