The news is by your side.

Advertisement

کرونا وبا کے دوران ارب پتی، کھرب پتی بن گئے

امریکی بزنس میگزین فوربز کی سالانہ فہرست کے مطابق کرونا وائرس کی وبا کی دوران ارب پتی افراد کھرب پتی ہوگئے اور ان کی دولت میں ناقابل یقین حد تک اضافہ ہوگیا۔

بین الاقوامی ویب سائٹ کے مطابق فوربز میگزین نے دنیا کے ارب پتی افراد کی 35 ویں سالانہ فہرست جاری کی ہے، فہرست میں دنیا کے 2 ہزار 755 ارب پتی افراد شامل ہیں۔

فوربز کی فہرست کے مطابق کرونا وائرس کی وبا کے دوران جہاں دنیا بھر کی مضبوط ترین معیشتیں بھی ہل گئی وہیں بہت سے ارب پتی اسی عرصے کے دوران کھرب پتی ہو گئے اور کئی افراد کی دولت میں ناقابل یقین حد تک اضافہ ہوا ہے۔

اعداد و شمار کے مطابق ارب پتیوں کی سالانہ فہرست کے تحت امریکی ٹیکنالوجی کمپنی ایمازون کے بانی جیف بیزوس مسلسل چوتھے سال بھی پہلے نمبر پر ہیں، ان کے اثاثوں کی مالیت 177 ارب ڈالرز ہے۔

فوربز کے مطابق رواں سال کے ان ارب پتیوں کی مجموعی دولت 13 اعشاریہ ایک کھرب ڈالرز ہے جو گذشتہ سال 8 کھرب ڈالر تھی۔

گاڑیاں بنانے والی بڑی کمپنی ٹیسلا کے چیف ایگزیکٹو ایلن مسک کا اس فہرست میں دوسرا نمبر ہے۔ گزشتہ سال اپنی دولت کے حساب سے وہ 31 ویں نمبر پر تھے۔ ان کے اثاثوں کی مالیت 151 ارب ڈالرز ہے۔

تیسرا نمبر لگژری اشیا بنانے والی فرم لوئس وٹون کے چیف ایگزیگٹو برنارڈ آرنالٹ کا ہے۔ ان کے اثاثے 150 ارب ڈالرز ہیں۔

چوتھے نمبر پر مائیکروسافٹ کے بانی بل گیٹس ہیں جن کے اثاثے 124 ارب ڈالرز کے ہیں، فیس بک کے چیف ایگزیکٹو مارک زکر برگ 97 ارب ڈالرز کے اثاثوں کے ساتھ پانچویں نمبر پر ہیں۔

سرمایہ کار اور بزنس ٹائیکون وارن بفٹ دو دہائیوں کے بعد پہلی مرتبہ دنیا کے پہلے پانچ امیر ترین افراد کی فہرست سے باہر ہوئے ہیں کیونکہ فوربز کی درجہ بندی میں ٹیکنالوجی کمپنیوں کے ایگزیکٹوز کا غلبہ ہے۔

اس سال کی فہرست میں 493 نئے افراد بھی شامل ہوئے ہیں جن میں ڈیٹنگ ایپ بمبل کی چیف ایگزیکٹو وہٹنی وولف ہرڈ بھی شامل ہیں۔

فوربز کی فہرست کے مطابق امریکا بدستور سب سے زیادہ ارب پتیوں کی سرزمین ہے جبکہ اس حوالے سے چین دوسرے اور بھارت تیسرے نمبر پر موجود ہے۔ اعداد و شمار کے مطابق امریکہ میں 724، چین میں 626 اور بھارت میں 140 ارب پتی رہتے ہیں۔

فوربز میگزین کے مطابق گزشتہ ایک سال کے دوران 493 نئے ارب پتی منظر عام پر آئے ہیں۔ ان نئے ارب پتیوں میں سے 210 کا تعلق چین اور ہانگ کانگ سے ہے جبکہ 98 امریکی شہری ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں