The news is by your side.

Advertisement

وزیر خارجہ کی مالدیپ میں پھنسے 4 پاکستانیوں کی معاونت کی درخواست

اسلام آباد: وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی اور مالدیپ ہم منصب عبداللہ شاہد کے درمیان ٹیلی فونک رابطہ ہوا اس دوران کرونا عالمی وبا سے نمٹنے کے لیے مؤثر لائحہ عمل اپنانے پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق دونوں رہنماؤں کے درمیان ٹیلی فونک گفتگو کے دوران وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے مالدیپ میں پھنسے 4 پاکستانیوں کی معاونت کی درخواست کی۔ دونوں وزرائے خارجہ نے اس وبا سے نمٹنے کے لیے مشاورتی سلسلے کو جاری رکھنے کا فیصلہ کیا۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان میں مالدیپ کے 22 زیر تربیت طلبا صحت مند ہیں، پاکستان اور مالدیپ دو طرفہ تعلقات کو انتہائی اہمیت دیتا ہے۔ وزیر خارجہ شاہ محمودقریشی نے مالدیپ کی طرف سے مؤثر اقدامات کوسراہا۔

شاہ محمود کا کہنا تھا کہ توقع ہے مالدیپ جلد اس وبا پر قابو پانے میں کامیاب ہو جائے گا، پاکستان میں سارک سمٹ کے انعقاد میں سب سے بڑی رکاوٹ بھارت ہے، اس کے باوجود ہم نے بھارتی درخواست پر سارک ویڈیوکانفرنس میں شمولیت اختیار کی، ہم سمجھتے ہیں عالمی وبا سے نمٹنے کے لیے مشترکہ کاوشوں کی ضرورت ہے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا ایرانی ہم منصب سے رابطہ

انہوں نے کہا کہ ایران بری طرح متاثر ہے، ہزاروں افراد اس وبا کا شکار ہو چکے، ایران کو معاشی پابندیوں سے اس وبا پر قابو پانے میں مشکلات ہیں، ایران سے معاشی پابندیوں کو فوری طور پر ہٹانے کی ضرورت ہے۔

وزیرخارجہ کا مزید کہنا تھا کہ عالمی وبا کے پھیلاؤ سے ترقی پذیر ممالک کو معاشی مسائل کا سامنا ہے، یورپی یونین ترقی پذیر ممالک کو قرضوں کی ادائیگی میں سہولت دے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں