site
stats
عالمی خبریں

تھائی لینڈ کی سابق وزیراعظم سزا سے بچنے کے لیے اچانک بیرونِ ملک فرار

بنکاک: تھائی لینڈ کی سابق وزیراعظم ینگلک شناوترا عدالتی فیصلے سے بچنے کے لیے بیرونِ ملک دبئی فرار ہوگئیں۔

تھائی میڈیا کے مطابق سابق وزیراعظم اپنے خلاف کرپشن کیس کا فیصلہ آنے اور سزا سے بچنے کے لیے اچانک بیرونِ ملک فرار ہوگئی، ینگلک کی اچانک روانگی پر شہری اور انتظامیہ حیران ہیں۔

خبررساں ادارے سے بات کرتے ہوئے سابق وزیراعظم کے قریبی ذرائع نے بتایا کہ وہ تھائی لینڈ سے فرار ہوکر دبئی جاسکتی ہیں۔

یاد رہے 50 سالہ سابق تھائی وزیراعظم کے خلاف مہنگے چاولوں کی سبسڈی کے حوالے تحقیقات شروع کی گئیں تھی جس کے بعد عدالت میں مقدمہ بھی درج کیا گیا تھا، مقدمے کی اگلی سماعت 25 اگست کو تھی جس میں سپریم کورٹ کے ججز سزا دینے یا نہ دینے کا فیصلہ سناتے۔

مقامی سیاسی رہنماؤں کا کہنا ہے کہ مجرمانہ غفلت پر جاری اس ٹرائل میں ینگلک کو 10 سال قید کی سزا سنائی جاسکتی تھی تاہم وہ سزا سے بچنے کے لیے اچانک بیرونِ ملک فرار ہوگئی۔

گزشتہ روز عدالتی پیشی کے موقع پر سابق وزیراعظم کے حامیوں اور اُن کے پارٹی رہنماؤں کی بڑی تعداد اظہارِ یکجہتی کے لیے سپریم کورٹ کے باہر جمع تھی تاہم اسی دوران اُن کے بیرونِ ملک فرار ہونے کی خبر سامنے آئی جس کے بعد سب حیرت مین مبتلاء ہوگئے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top