site
stats
حیرت انگیز

امریکی فضاؤں میں اڑتے ہوئے گھڑ سواردکھائی دینے لگے

آج کل سوشل میڈیا پر ایک تصویر بے پناہ وائرل ہورہی ہے جس میں بادلوں میں ہوا کے دوش پر چار گھڑ سوار اڑتے نظر آرہے ہیں، اور دنیا حیران ہے کہ یہ ماجرا کیا ہے؟۔

جی ہاں! جو تصویر سوشل میڈیا پر وائرل ہورہی ہے اس میں ایک دو نہیں بلکہ چار گھڑسوار ہوا کے دوش پر فراٹے بھرتے نظر آرہے ہیں۔

تصویر کے ساتھ منسلک کیپشن میں لکھا ہے کہ یہ تصویر امریکی ریاست فلوریڈا میں لی گئی ہے‘ تاہم یہ بھی تصور کیا جارہا ہے کہ تصویر 2016 میں نہیں بلکہ 2009 میں ممکنہ طورپر ملیشیا میں لی گئی تھی۔

15226530_10211651838677439_624251775_n

واضح رہے کہ تصویر میں چار گھڑ سوار نمایاں دیکھے جاسکتے ہیں اور مسیحی عقائد میں آخر ی زمانے آسمان سے چار گھڑ سواروں کے آسمان سے اترنے کا تذکرہ ملتا ہے جن میں سے ہر ایک یکے بعد دیگرت جنگ ‘ ابتلا ‘معیشت کی تباہی اور پھر موت سے منسوب ہے۔ مسیحی عقائد کے مطابق ان گھوڑوں نمودار ہونے سے قیامت کے برپا ہونے کا زمانہ شروع ہوگا۔


مکہ کی فضاؤں میں اڑنے والے گھوڑے کی حقیقت


یہی وجہ ہے کہ تصویر میں دیکھے گئے گھوڑوں اور ان کے سواروں نے دنیا بھر خصوصاً مسیحی برادری میں دہشت پھیلا رکھی ہے۔

تاہم حقیقت اس سے آگے کہیں ہیں ۔ جس تصویر کے بارے میں یہ گمان کیا جارہا تھاکہ وہ 2016 یا 2009 میں کہیں کھینچی گئی ہیں در حقیقت سن 2004 کی ثابت ہوئیں۔

kenwood-audio1-746x1024

جی ہاں! ای بے نامی ایک ویب سائٹ نے سن 2004 میں اس تصویر کے ساتھ ایک اشتہار شائع کیا گیا تھا جس میں ای بے کی ویب سائٹ کا حوالہ واضح دیکھاجاسکتا ہے جس میں کین وڈ نامی ایک ساؤنڈ سسٹم کی تشہیر کی جارہی ہے۔

کمپنی سے رابطہ کرنے پر معلوم ہوا کہ یہ اشتہار سن 2004 میں برانڈ کی تشہیر کے لیے شائع کیا گیا تھا اور اس میں نظرآنے والے چاروں گھوڑے درحقیقت کمپیوٹر سافٹ ویئر سے ڈیزائن کیے گئے تھے اور ان کاحقیقت سے کوئی تعلق نہیں ۔

اس کا مطلب یہ ہےکہ نہ تو 2009 میں ملیشیا کے آسمان پر اور نہ ہی 2016 میں امریکی ریاست فلوریڈا کے آسمان پر کسی قسم کے گھوڑے اڑتے دکھائی دیے بلکہ یہ سب سوشل میڈیا پر بیٹھ کر ہوائی گھوڑے اڑانے والوں کا کارنامہ ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top