The news is by your side.

Advertisement

تیز رفتارگاڑی کی ٹکر سے 4 افراد کی موت کا مقدمہ درج، کشمالہ طارق کا بیٹا اذلان نامزد

اسلام آباد : تیز رفتارگاڑی کی ٹکر سے 4 افراد کی موت کا مقدمہ درج کرلیا گیا ، ایف آئی آر میں کشمالہ طارق کے بیٹے اذلان کو بھی نامزد کیا گیا ہے، جاں بحق نوجوان مانسہرہ سے اے این ایف کا ٹیسٹ دینے آئے تھے۔

تفصیلات کے مطابق سری نگر ہائی وے پر تیز رفتارگاڑی نے 6 افراد کوکچل دیا، ریسکیوذرائع کا کہنا ہے کہ حادثے میں 4افرادجاں بحق اور 2زخمی ہوگئے جبکہ کارسوارفرار ہوگیا۔

تین جاں بحق افراد مانسہرہ کے رہنے والےہیں اور ان کی امیرشکیل،فاروق اورحیدرعلی کے نام سے شناخت ہوئی ، ٹریفک پولیس کا کہنا ہے کہ ڈبلیو ایکس077  پراڈو گاڑی نے دیگرگاڑیوں کوہٹ کیاہے، ایک گاڑی کا نمبرجی اے ایچ 555ٹویوٹا فارچیونر ہے، سی سی ٹی وی کیمروں سےفوٹیج حاصل کی جارہی ہیں۔

عینی شاہدین نے بتایا کہ تیز رفتارگاڑی ایک نوجوان چلارہاتھا، گاڑی بیسٹ ویسٹرن کےمالک کی ہے اور بیسٹ ویسٹرن کےمالک کشمالہ طارق کے شوہر بتائے جاتے ہیں۔

ذرائع کے مطابق وفاقی محتسب کشمالہ طارق کابیٹااذلان خان بھی گاڑی میں موجودتھا تاہم حادثےکامعاملہ ہوٹل مالک کےڈرائیورپرڈالنےکی کوشش کی جارہی ہے اور پولیس کو معلومات دی جارہی ہیں کہ گاڑی ڈرائیوروقاص چلارہاتھا۔

ایس پی سرفرازورک کا کہنا ہے کہ گاڑی کاڈرائیورفیاض حراست میں لےلیاگیا، بیسٹ ویسٹرن ہوٹل کامالک وقاص بھی گاڑی میں موجودتھا، وقاص کے چہرے پر چوٹ آئی ہے کسی اسپتال گیا ہے ، تلاش جاری ہے جبکہ گاڑی کوبھی تحویل میں لےلیاگیاہے۔

دوسری جانب جی الیون میں ٹریفک حادثےمیں4 افراد کی موت کا مقدمہ درج کرلیا گیا ہے ، زخمی شہری کی مدعیت میں مقدمہ تھانہ رمنامیں درج کیاگیا، ایف آئی آر میں کشمالہ طارق کا بیٹا اذلان بھی نامزد ہے۔

ایف آئی آر کے متن میں کہا گیا کہ حادثےمیں 4دوست جاں بحق ہوئے، جاں بحق نوجوان مانسہرہ سےاےاین ایف کاٹیسٹ دینےآئےتھے، سفید رنگ کی جیپ نمبر ڈبلیووائی077نےٹکرماری، جیپ کی ٹکرسےگاڑی سوار4نوجوان جاں بحق اور موٹرسائیکل سوارزخمی ہوا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں