The news is by your side.

Advertisement

گیس بل سے مکمل چھٹکارا کیسے ممکن؟ ویڈیو دیکھیں

کراچی : سوئی گیس کی لوڈشیڈنگ اور بجلی کے بل زیادہ آنے سے تقریباً ہر گھر ہی متاثرہے، بائیو گیس کے ذریعے گیس بل سے مکمل چھٹکارا ممکن ہے۔

پاکستان میں بہت سے لوگ شاید بائیو انرجی کے بارے میں نہیں جانتے ہوں گے تو ان کو واضح کرتے چلیں کہ بائیوانرجی دراصل نباتات اور حیوانات کی نامیاتی مرکبات کو ری سائیکل کرکے ان سے حاصل شدہ توانائی کو کہا جاتا ہے، جو ٹھوس، مائع اور گیس تینوں حالتوں میں تیار کی جاسکتی ہے۔

اس کے علاوہ بائیو گیس کی مدد سے بجلی پیدا کرنا بھی ممکن ہے، موجودہ دور میں توانائی کے متبادل ذرائع میں بائیو انرجی کی اہمیت تیزی سے بڑھ رہی ہے۔،

اس حوالے سے اے آر وائی نیوز کے پروگرام باخبر سویرا میں ماہربائیو انرجی مسعود عالم نے ناظرین کو اس توانائی کی افادیت اور اہمیت سے آگاہ کیا۔

انہوں نے بتایا کہ پاکستان میں یہ چیز نئی نہیں ہے گزشتہ 80 کی دہائی میں اس حوالے سے کافی کام ہوا لیکن سوئی گیس کی آسانی سے دستیابی کے باعث اس منصوبے کو تقویت نہ مل سکی۔

مسعود عالم نے نے بتایا کہ گھروں میں اس کا چھوٹا پلانٹ لگانا بہت آسان ہے، ایک کنوئیں کی شکل میں دیوار کھڑی کرکے اس میں ایک سائیڈ سے گوبر ڈالتے ہیں۔

اس کامکمل پراسس 30سے 40دن کا ہوتا ہے، جس کے بعد گیس باقاعدگی بننا شروع ہوجاتی ہے، جو ایک گھر میں استعمال ہونے والی گیس کی تمام ضروریات پوری کرسکتی ہے۔

دو کلو گرام کچرے سے دو میٹر کیوبک گیس پیدا ہوتی ہے جس سے ایک گھر کے  پانچ افرادکا کھانا با آسانی تیار کیا جا سکتا ہے، پانچ کیوبک میٹر گیس کی صلاحیت  والے منی بائیو گیس پلانٹ کے ساتھ جنریٹر کی مدد سے چار کلو واٹ بجلی پیدا کی جاسکتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں