The news is by your side.

سندھ کے سیلاب متاثرہ علاقوں میں موت کا رقص جاری

دادو: سیلاب متاثرہ علاقوں میں گیسٹرو ڈائریا اور ملیریا نے وبائی صورت اختیار کرلی اور ایک ہی گھر کے 3 بچے جان کی بازی ہارگئے۔

تفصیلات کے مطابق سندھ کے سیلاب متاثرہ علاقوں میں موت کا رقص جاری ہے ، گیسٹرو اور خون کی کمی سے ایک ہی گھر کے 3 بچے جان کی بازی ہارگئے۔

سیتاروڈ کے علاقے میں گیسٹرو اور خون کی کمی سے3بہن بھائی چل بسے، گاؤں نظام آباد کے مزدور بشیر احمد کے 3 بچے گیسٹرو اور ملیریا میں مبتلا تھے۔

2 دن کے دوران شہری بشیر احمد کی 2 بیٹیاں اور ایک بیٹا وبا کے شکار بنے۔

دوسری جانب 15روز کے دوران سول اسپتال میں گیسٹرو کے 1755 مریض لائے گئے ، جس میں 5 سال سےکم عمر کے 288بچے شامل ہیں۔

سکھر کے سول اسپتال میں ملیریا کے مرض میں مبتلا 445 مریض بھی داخل کیے گئے۔

گزشتہ 24 گھنٹے کے دوران مختلف اضلاع میں 9 سیلاب متاثرین دم توڑ گئے جبکہ یکم جولائی سے انیس ستمبر تک 318 سیلاب متاثرین انتقال کر چکے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں