The news is by your side.

جرمنی: ڈرائیورز کے لیے بھنگ کے استعمال کی حد بڑھانے کا مطالبہ

برلن: جرمنی میں ماہرین نے ڈرائیورز کے لیے بھنگ کے استعمال کی حد بڑھانے کا مطالبہ کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق جرمن ماہرین کا مطالبہ ہے کہ ڈرائیوروں کے لیے بھنگ کے استعمال کی حد میں اضافہ کیا جائے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ اس وقت بھنگ کے کیمیائی مادے THC (ٹیٹرا ہائیڈرو کینابینول) کی جو حد مقرر ہے اس کے تحت ایسے ڈرائیوروں کو بھی جرمانہ کیا جا سکتا ہے جو پہلے ہی ڈرائیونگ کے لیے مکمل طور پر فٹ ہوتے ہیں۔

ماہرین کے مطابق ٹی ایچ سی وہ مادہ ہے جو بھنگ یا کینابس کے استعمال کی صورت میں مذکورہ فرد کی ذہنی حالت پر اثر انداز ہوتا ہے۔

ڈرائیوروں کے لیے بھنگ کے استعمال سے متعلق بدھ 17 اگست کو جرمنی کے شمالی شہر گوسلر میں منعقدہ ٹریفک کورٹ کانفرنس میں ماہرین غور وخوض کریں گے۔

جرمن وکلا کا بھی کہنا ہے کہ عدالت نے ٹی ایچ سی کی جو مقدار مقرر کی ہے وہ درست نہیں، کیوں کہ یہ ڈرائیونگ کی صلاحیت کو مد نظر رکھ کر مقرر نہیں کی گئی۔

شراب یا الکحل کے لیے خون میں ایک نینو گرام فی ملی لیٹر مقرر ہے، جس کا مطلب ہے کہ ڈرائیور شراب کے زیر اثر آ چکا ہے، تاہم جرمن انشورنس ایسوسی ایشن کے ایکسیڈنٹ ریسرچ کے سربراہ زیگفریڈ بروکمان نے مطالبہ کیا ہے کہ ٹی ایچ سی کی خون میں زیادہ سے زیادہ مقدار تین نینوگرام فی ملی لٹر مقرر کی جائے، کیوں کہ ٹی ایچ سی، الکحل کے برعکس مختلف لوگوں میں مختلف طرح کے اثرات کی وجہ بنتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں