The news is by your side.

Advertisement

گھانا میں جنازوں پر رونا اور ڈانس کرنا کاروبار بن گیا

گھانا : مغربی افریقہ کے ملک گھانا میں مرنے والے سے محبت کا اظہار اور غم کا ماحول کرنے لیے بھاری معاوضے کے عوض رونے اور ڈانس کرنے والے افراد کو بلوایا جاتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق افریقہ کے اکثر ممالک میں جنازوں کی سماجی اہمیت بہت زیادہ ہے، جس پر رونے والوں اور غم زدہ ہونے والوں کے غم کو کم کرنے کے لیے کرائے پر ڈانس کرنے والے افراد کو بلوایا جاتا ہے۔

سوشل میڈیا پر گھانا کے حوالے متعدد ویڈیوز وائرل ہوئی ہیں جس میں گھانا میں ہونے والوں جنازوں میں غم اور رونے دھونے کا ماحول کم کرنے کے لیے کرائے پر ڈانس کرنے والوں کو بلوایا جاتا ہے۔

ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ کیسے گھانا میں جنازوں پر ڈانس کرنے والے افراد تابوت کو اپنے کندھوں پر اٹھا کر جنازے کو کسی ڈانس پرفارمنس میں تبدیل کردیتے ہیں، گھانا میں جنازوں پر ڈانس کرنا باقاعدہ کاروبار بن گیا ہے۔

مغربی افریقہ کے شہری جنازوں پر رونے کے لیے موت کا جشن مناتے ہیں اور اس کے لیے ڈانس کرنے والوں کو بھاری معاوضے کے عوض بلوایا جاتا ہے، جو آہستہ آہستہ پورے ملک میں مشہور ہورہا ہے۔

گھانا کے شہریوں کا کہنا ہے کہ جنازوں میں ڈھول بجانا اور گانا گانا یہاں کی رسم و رواج کا حصّہ ہے، اسی لیے گھانا کے لوگ موت کے دوران بھی موسیقی کو فراموش نہیں کرتے۔

جہاں گھانا میں جنازوں میں موسیقی اور ڈانس کو فراموش نہیں کیا جاتا وہیں، گھانا کے شہری اپنے پیاروں کے جنازوں میں رونے اور غم زدہ ہونے والوں کو معاوضے دے کر بلواتے ہیں۔ جس سے مرنے کے ساتھ اہل خانہ کی محبت کا اندازہ ہوتا ہے۔

مغربی افریقی ملک کے شہری مرنے والے سے اپنی محبت کا اظہار کرنے کےلیے جعلی رونے والوں کو دعوت دیتے ہیں جس کے باعث گھانا میں جنازوں پر نالہ و فریاد کرنا بھی ایک کاروبار بن گیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق افریقہ میں جنازوں پر 15 سے 20 لاکھ روپے خطیر رقم خرچ کی جاتی ہے، ساتھ ساتھ مردے کی تدفین کے لیے بڑے بڑے اشتہارات بھی لگوائے جاتے ہیں اور انہیں قیمتی تابوتوں میں رکھ کر دفن کیا جاتا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں