The news is by your side.

Advertisement

دہشت گردی کے واقعات میں سب سے زیادہ اے این پی کو نشانہ بنایا گیا: غلام احمد بلور

پشاور: سابق وزیر ریلوے اور عوامی نیشنل پارٹی کے رہنما غلام احمد بلور کا کہنا ہے کہ دہشت گردی کے واقعات میں سب سے زیادہ عوامی نیشنل پارٹی کو نشانہ بنایا گیا۔ ہم سیاسی ورکرز ہیں، ہمیں نشانہ بنانا آسان ہے۔

تفصیلات کے مطابق پشاور کے علاقے یکہ توت میں ہونے والے خودکش حملے میں جاں بحق ہارون بلور کے چچا غلام احمد بلور کا کہنا ہے کہ دہشت گردی کے حالیہ واقعات افسوسناک ہیں، دہشت گردی کے واقعات میں سب سے زیادہ عوامی نیشنل پارٹی کو نشانہ بنایا گیا۔

غلام احمد بلور کا کہنا تھا کہ واقعے سے 6 منٹ پہلے مجھے وہاں پہنچنا تھا۔ اگر وقت پر پہنچ جاتا تو شاید حملے کا نشانہ بن جاتا۔

انہوں نے کہا کہ بہت لوگوں کو لگ رہا ہے کچھ گڑبڑ ہو رہی ہے۔ اپنا مزید کوئی آدمی مروانے کے لیے تیار نہیں ہوں۔ ’میں کسی سے ڈرتا نہیں ہوں، جب موت آنی ہوگی آئے گی‘۔

غلام احمد بلور کا کہنا تھا کہ انتخابی نتائج سے متعلق ابھی کچھ کہنا قبل از وقت ہے، شریف خاندان جتنی سیکیورٹی نہیں، بس ضرورت کے مطابق چاہیئے۔ ’ہم سیاسی ورکرز ہیں، ہر کوئی گلے ملتا ہے، ہمیں نشانہ بنانا آسان ہے‘۔

انہوں نے سیکیورٹی دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں سیکیورٹی ملنی چاہیئے، انتظامیہ کا کام ہے سیکیورٹی دے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں