site
stats
پاکستان

پسند کی شادی، خواہش ظاہر کرنے پر اہل خانہ نے لڑکی کو زندہ جلادیا

گجرات: ایم اے کی طلبہ ماریہ کو کزن کے ساتھ شادی کا اظہار کرنے پر اہل خانہ نے زندہ جلادیا، لڑکی دم توڑ گئی، پولیس نے لڑکی کے نانا، والدہ، ماموں اور بھائی کو گرفتار کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب کے علاقے گجرات میں واقع سوکلا میں ماریہ نامی ایم اے کی طلبہ نے اپنے کزن کے ساتھ شادی کی خواہش کا اظہار کیا تو گھر والوں نے لڑکی کو جلا دیا۔

متاثرہ لڑکی کو تشویش ناک حالت میں سی ایم ایچ کھاریاں منتقل کیا گیا جہاں ڈاکٹروں نے اُس کو بچانے کی سر توڑ کوشش کی مگر وہ 90 فیصد جسم جھلسنے کی وجہ سے جانبر نہ ہوسکی۔

ویڈیو دیکھیں

نمائندہ اے آر وائی عامر بٹ کے مطابق لڑکی کی ہلاکت کے بعد سب انسپکٹر عبدالرحمان کی مدعیت میں قتل کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کر کے لڑکی کی والدہ، بھائی، ماموں اور نانا کو حراست میں لے لیا گیا۔

غیرت نے گوارا نہیں کیا، اسی لیے آگ لگادی

مقتولہ کے نانا نے اے آر وائی نیوز کے نمائندے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ’’ماریہ نے کزن کے ساتھ پسند کی شادی کرنے کا اظہار کیا تاہم میری غیرت نے گوارا نہیں کیا اس لیے میں نے اُس پر پیٹرول چھڑک کر آگ لگا دی‘‘۔

اہل خانہ نے پولیس کو بیان دیا کہ ماریہ ایم اے کی طلبہ تھی اور وہ اپنے ہم جماعت کزن کے ساتھ شادی کرنے کی خواہش مند تھی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top