The news is by your side.

Advertisement

لندن: نمازکی ادائیگی کے لیے جانے والی کمسن بچی کارتلے روندی گئی

لندن: برطانیہ میں اپنے والد کے ساتھ نماز کی ادائیگی کے لیے جانے والی کمسن بچی کو تیز رفتار کار نے روند کر قتل کر ڈالا، پولیس نے سانحے کی تحقیقات شروع کردی ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق  چھ سالہ جنت البقیہ اپنے والد کے ساتھ ویسٹ مڈلینڈز کے علاقےاسمتھ وک میں اولڈ بری روڈ سڑک عبور کررہی تھی جب یہ سانحہ پیش آیا۔

 معصوم بچی  زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے موقع پر ہی دم توڑ گئی تھی ۔ پولیس نے اس واقعے کی تفتیش کے دوران دو مشتبہ افراد کو گرفتارکیا ، بعد ازاں انہوں چھوڑدیا گیا تاہم ان کے خلاف تحقیقات جاری ہیں۔

پولیس کے مطابق مشکوک افراد میں ایک 27 سالہ مرد ہے جس کا تعلق اسمتھ وک کے علاقے سے ہے جبکہ ایک 26 سالہ خاتون ہیں جو کہ بیئر ووڈ کی رہائشی ہیں۔ دونوں کو حادثے کے کچھ ہی دیر بعد غیر ذمہ دارانہ ڈرائیونگ کرتے ہوئے حراست میں لیا گیا تھا۔

کمسن بچی کے والد کا کہنا ہے کہ ’’ان کی بیٹی بہت خوش مزاج تھی اور اس کا وجود ہر کسی کے چہرے پر مسکراہٹ لے آتا تھا، ہم اس کا صدمہ نجانے کس طرح سہہ پائیں گے‘‘۔

پولیس کے سراغ رساں گبسن کا کہنا ہے کہ  ’’ان کی تحقیقات جاری ہیں  اور معلوم کرنے کی کوشش کررہے ہیں کہ کونسی وجوہات اس سانحے کا سبب بنیں‘‘۔ انہوں نے عوام سے اپیل کی ہے کہ’’ اگر کوئی اس واقعے کا عینی شاہد ہے جس نے تصادم دیکھا ہو، یا کسی کے سی سی ٹی وی کیمرے یا ڈیش بورڈ کیمرے میں  اس حادثے کے مناظر ریکارڈ ہوئے ہیں تو وہ پولیس کے ساتھ شیئر کرے‘‘۔

انہوں نے بتایا ہے کہ پولیس کے فیملی لیاژیان آفیسر متاثرہ خاندان کی دیکھ بھال کررہے ہیں اور صدمے اور دکھ کی اس گھڑی  میں ان کی تمام تر ہمدردیاں اس خاندان کے ساتھ ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات  کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں