The news is by your side.

Advertisement

آؤٹ یا ناٹ آؤٹ، علیم ڈار پر مارک وا اور شین وارن کی تنقید

ملیبرن: آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کے درمیان جاری ٹیسٹ میچ کے تیسرے روز مچل سینٹنر کا آؤٹ متنازع بن گیا۔

تفصیلات کے مطابق آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کے درمیان جاری ٹیسٹ میچ کے تیسرے روز مچل اسٹارک کی باؤنسر پر مچل سینٹنر کا آؤٹ متنازع بن گیا، سابق آسٹریلوی کھلاڑیوں نے علیم ڈار پر تنقید شروع کردی۔

مچل سینٹنر کو مچل اسٹارک نے باؤنسر کرائی تو آسٹریلیا نے کیچ کی اپیل کی، آن فیلڈ امپائر مارکس ایرسمس کی جانب سے ناٹ آؤٹ دئیے جانے پر آسٹریلیا نے ریویو لیا، تھرڈ امپائر علیم ڈار نے بھی متعدد ری پلیز کے بعد ناٹ آؤٹ کا فیصلہ برقرار رکھا۔

امپائر کی جانب سے فیصلہ دئیے جانے کے بعد آسٹریلوی کپتان ٹم پین امپائر سے الجھتے ہوئے دکھائی دئیے۔

تھرڈ امپائر علیم ڈار کے فیصلے پر سابق آسٹریلوی کھلاڑیوں نے بھی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ امپائر نے غلط فیصلہ دیا ہے، علیم ڈار کو مختلف زاویوں سے دیکھنا چاہئے تھا۔

متنازع آؤٹ پر سوشل میڈیا پر بھی بحث شروع ہوگئی، کچھ صارفین کی رائے کے مطابق علیم ڈارنے بالکل ٹھیک فیصلہ دیا ہے جبکہ کسی کا کہنا ہے کہ یہ آؤٹ تھا امپائر نے جلد بازی میں فیصلہ دے دیا۔

مزید پڑھیں: ٹم پین کی وکٹ نے ڈی آر ایس سسٹم پر سوال اٹھادیا

واضح رہے کہ گزشتہ روز بھی آسٹریلوی کپتان ٹم پین 79 رنز پر ایل بی ڈبلیو آؤٹ ہوئے جو ڈی آر ایس سسٹم کے تحت آؤٹ قرار دیا گیا لیکن آسٹریلوی کپتان نے ڈی آر ایس سسٹم پر سوال اٹھادیا تھا۔

ٹم پین کا کہنا تھا کہ میرا خیال ہے کہ گیند جس لینتھ پر پچ ہوئی اور بولرز آراؤنڈ کا وکٹ بولنگ کررہا تھا تو گیند کا وکٹ کی لائن میں آنا میرے لیے حیران کن تھا۔

دوسری جانب کچھ کمنٹیٹر نے ویگنر کی بال پر یہ یقین کرنا مشک لہے کہ گیند اتنی تیزی سے کاٹ کھا کر وکٹ کی لائن سے ٹکرا جاتی ہے اور مڈل اسٹمپڈ ہٹ کرتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں