The news is by your side.

Advertisement

اب ’عینک‘ مختلف زبانوں کا ترجمہ کرے گی

گوگل نے مختلف زبانوں کا ترجمہ کرنے والی عینک متعارف کروادی جس کی ویڈیو بھی شیئر کی گئی ہے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق گوگل نے دس سال بعد باقاعدہ نظر کی عینک کا اعلان کیا ہے جو سامنے بولے جانے والے الفاظ اور جملوں کا حقیقی وقت میں ترجمہ کرسکتی ہے۔

گوگل گلاس کو ادارے کی ذیلی کمپنی ایلفابیٹ نے تیار کیا ہے جن کا دعویٰ ہے کہ یہ فوری طور پر ایک سے دوسری زبان میں ترجمہ کرکے اس کا ٹیکسٹ عینک کے شیشے پر ظاہر کرتی ہے جسے باسہولت انداز میں پڑھا جاسکتا ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ اب جاپان، جرمنی اور روس جانے والے افراد اس عینک سے فائدہ اٹھاسکتے ہیں جو غیرکی زبان کو آپ کی اپنی زبان بناسکتی ہے۔

گوگل نے ڈویلپر کانفرنس میں اس کی تفصیلات دی ہیں لیکن اب تک عینک کا حتمی نام نہیں بتایا ہے اور نہ ہی اس کی قیمت بیان کی ہے سب سے بڑھ کر یہ بھی راز ہے کہ اسے کب ریلیز کیا جائے گا۔

ویڈیو میں گوگل نے ہسپانوی، انگریزی اور چینی زبان کے باہمی ترجمے کا عملی مظاہرہ کیا ہے۔

اسی کانفرنس میں گوگل نے میپس میں جدت بھی دکھائی ہے اب گوگل میپس کی بدولت فضائی یا ایریئل مناظر اور اسٹریٹ ویو یا زمینی مناظر کو نقشے میں ظاہر کیا ہے دوسری جانب کانفرنس میں مصنوعی ذہانت پرمبنی مزید کئی مصنوعات اور ایپس بھی متوقع ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں