25.7 C
Ashburn
بدھ, مئی 22, 2024
اشتہار

سرکاری افسران کے اثاثے : حکومت نے آئی ایم ایف کی شرط پر گھٹنے ٹیک دیئے

اشتہار

حیرت انگیز

اسلام آباد : حکومت نے آئی ایم ایف کی سرکاری افسران کے اثاثے پبلک کرنے کی شرط پر عمل درآمد کا آغاز کردیا۔

تفصیلات کے مطابق حکومت نے آئی ایم ایف کی شرط پر عمل درآمد کا آغاز کردیا۔

حکومت نے گریڈ 17 سے 22 تک افسران اور ان کے اہلخانہ کے اثاثوں کی تفصیلات طلب کرلیں۔

- Advertisement -

اس حوالے سے نوٹیفکیشن میں کہا ہے کہ سرکاری افسران کو اندرون اور بیرون ملک تمام اثاثے ظاہر کرناہوں گے۔

نوٹیفکیشن میں کہا گیا کہ گریڈ 17 سے 22 تک افسران کے اثاثوں کی تفصیلات تک متعلقہ اداروں کو رسائی ہوگی۔

حکومت نے تمام افسران اور ان کے اہلخانہ کے اثاثے گوشوارے میں ظاہر کرنا لازمی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ افسران اور ان کے اہلخانہ کے بینکوں اکاؤنٹس کی مکمل تفصیلات جمع کراناہوگی۔

یاد رہے آئی ایم ایف نے پاکستان سے سرکاری افسران کے اثاثہ جات پبلک کرنے کے لئے قانونی ترامیم کا مطالبہ کیا تھا اور ان کی بیرون ملک اثاثوں کی تفصیلات بھی مانگی تھی۔

ذرائع ایف بی آر کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف نے سرکاری افسران کے اثاثے پبلک کرنے کیلئے اتھارٹی کے قیام کا مطالبہ کردیا ہے۔

ذرائع نے کہا تھا کہ بیورکریسی کے بیرون ملک اثاثوں کی تفصیلات بھی آئی ایم ایف نے مانگ لی ہے اور بیورو کریسی کے بیرون ملک منقولہ اور غیرمنقولہ اثاثوں کو پبلک کرنے کا بھی مطالبہ کیا۔

Comments

اہم ترین

ویب ڈیسک
ویب ڈیسک
اے آر وائی نیوز کی ڈیجیٹل ڈیسک کی جانب سے شائع کی گئی خبریں

مزید خبریں