The news is by your side.

Advertisement

حکومت کا غیر ضروری اور لگژری اشیا کی درآمد پر مکمل پابندی کا فیصلہ

اسلام آباد: شہباز حکومت نے غیر ضروری اور لگژری اشیا کی درآمد پر مکمل پابندی کا فیصلہ کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق ملک میں معاشی بحران کو بڑھنے سے روکنے کے لیے شہباز حکومت اہم فیصلہ کرتے ہوئے غیر ضروری اور لگژری اشیا کی درآمد پر مکمل پابندی لگانے جا رہی ہے۔

وزیر اعظم شہباز شریف کی زیر صدارت غیر ضروری اور لگژری اشیا کی درآمد پر اجلاس منعقد ہوا، جس میں انھوں نے سخت مؤقف اپناتے ہوئے واضح کیا کہ غیر ضروری و لگژری اشیا کی درآمد پر قیمتی زرمبادلہ خرچ نہیں ہونے دیں گے۔

ملک کو ایک طرف زر مبادلہ کے ذخائر کے استحکام کا مسئلہ درپیش ہے، دوسری طرف انٹر بینک اور اوپن مارکیٹ میں ڈالر ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ کر اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی 200 روپے 50 پیسے میں فروخت جاری ہے۔

ملک کی بگڑتی معاشی صورت حال پر قابو پانے کے لیے حکومت نے اہم اقدامات کا فیصلہ کیا ہے، اس سلسلے میں حکومت نے امپورٹڈ اشیا پر ڈیوٹی بڑھانے کی بھی تجویز پیش کی ہے، ان اشیا میں درآمدی ٹائر، مشینری، پاور جنریشن مشینری، اسٹیل کی مصنوعات شامل ہیں۔

اسی طرح 1000 سی سی سے اوپر کی گاڑیوں پر 100 فی صد ریگولیٹری ڈیوٹی، درآمدی ٹائلز پر ریگولیٹری ڈیوٹی میں 40 فی صد اضافے، اور موبائل فون پر ڈیوٹی دگنی کرنے کی تجویز پیش کی گئی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں