The news is by your side.

Advertisement

پی ٹی آئی اور ق لیگ کی قیادت کو نظر بند، کارکنوں کو گرفتار کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد: تحریک انصاف کے دھرنے سے نمٹنے کے لیے حکمت عملی تیار کرلی گئی، دھرنے سے دو روز قبل مسلم لیگ (ق) اور تحریک انصاف کی مرکزی قیادت کو گھروں میں نظر بند کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا۔

نمائندہ اے آر وائی اظہر فاروق کے مطابق 2 نومبر کو تحریک انصاف کے دھرنے سے متعلق حکومت نے حکمتِ عملی تیار کرلی جس کے تحت مسلم لیگ (ق) اور پی ٹی آئی کی مرکزی قیادت کو دھرنے سے دو روز قبل نظر بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

اسلام آباد اور راولپنڈی کا زمینی رابطہ منقطع کردیا جائے گا

دھرنے سے قبل اسلام آباد اور راولپنڈی کا زمینی رابطہ منقطع کردیا جائے گا جبکہ دریائے جہلم اور اٹک کے پل کنٹینر لگا کر بند کردیے جائیں گے تاکہ شرکا کو اسلام آباد داخل ہونے سے روکا جاسکے۔

یہ پڑھیں: اسلام آباد پولیس نے سندھ حکومت سے بھی قیدیوں کی وینز اور بکتر بند گاڑیاں مانگ لیں

ذرائع نے بتایا کہ اسی ضمن میں یکم نومبر کو پشاور سے اسلام آباد اور لاہور سے اسلام آباد جانے والے موٹر وے کو بھی بند کردیا جائےگا ساتھ ہی راولپنڈی اور اسلام آباد کا زمینی رابطہ منقطع کردیا جائےگا۔

ضلعی سطح پر کارکنوں کی گرفتاری کا حکم

حکمتِ عملی میں طے کیا گیا ہے کہ ڈویژن اور ضلع کی سطح پر سرگرم کارکنان کو گرفتار کرنے کے لیے مقامی پولیس کو احکامات جاری کردئیے گئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:پی ٹی آئی دھرنا ناکام بنانے کیلئے حکومت نے پیپلز پارٹی سے مدد مانگ لی

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں