The news is by your side.

Advertisement

حکومت نے آئی جی سندھ کلیم امام کی تبدیلی کا فیصلہ کرلیا

کراچی : وفاقی حکومت نے سندھ میں آئی جی کلیم امام کی تبدیلی کا فیصلہ کرلیا ہے اور یقین دلایا جلد آئی جی کے نام پراتفاق ہوجائے گا، ڈاکٹر کامران فضل اور دیگر ناموں پر مشاورت جاری ہے۔

تفصیلات کے مطابق ذرائع سندھ حکومت کا کہنا ہے کہ وفاق نے سندھ میں آئی جی کلیم امام کو تبدیل کرنےکافیصلہ کرلیا ہے ، نئے آئی جی کے ناموں پر وفاق اور صوبے میں مشورے جاری ہیں، ڈاکٹر کامران فضل اوردیگر ناموں پر مشاورت ہورہی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وفاق نےسندھ کو آگاہ کیا،جوابی خط لکھنےکی ضرورت نہیں ، آئی جی پروزیراعظم اوروزیراعلیٰ کی سطح پرصلح مشورےجاری ہیں، وفاق نے یقین  دلایا جلد آئی جی کے نام پراتفاق ہوجائے گا۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم نےاپنے قریبی ذرائع کو آئی جی کی تبدیلی کے حوالے سے آگاہ کیا ہے۔

اس سے قبل آئی جی سندھ کی تبدیلی سے متعلق وفاق نے سندھ حکومت کو جوابی خط ارسال کیا تھا ، جس میں موقف اپنایا تھاکہ سندھ حکومت کی درخواست پر غور  جاری ہے، حتمی فیصلے تک کلیم امام عہدے پر کام کرتے رہیں گے، فیصلے تک ایڈیشنل آئی جی کو چارج نہیں دیا جاسکتا۔

مزید پڑھیں : سندھ حکومت نے آئی جی پولیس کے کرائم میں کمی کے دعوے کو مسترد کر دیا

یاد رہے جمعرات کو سندھ حکومت نے وفاق کو خط میں کہا تھا صوبائی کابینہ آئی جی تبدیل کرنے کی منظوری دے چکی ہے ، آئی جی جرائم روکنے میں ناکام رہے ،  سندھ حکومت نے نئے آئی جی کے لیے غلام قادر تھیبو، مشتاق مہر اور کامران فضل کے نام تجویز کیے تھے ۔

بعد ازاں  وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے وزیراعظم عمران خان سے ٹیلی فونک رابطہ کیا تھا۔ جس میں آئی جی سندھ کی تبدیلی کے حوالے سے پیدا شدہ صورت حال پر تبادلہ خیال کیا گیا تھا۔

واضح رہے سندھ حکومت نے آئی جی سندھ کلیم امام کو ہٹانے کا فیصلہ کیا تھا اور سندھ کابینہ نے آئی جی کلیم امام کی خدمات وفاق کے سپرد کرنے کی منظوری بھی دی تھی۔

بعد ازاں تحریک انصاف نے آئی جی سندھ کے تبادلے کو روکنے کے لیے عدالت سے رجوع کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں