site
stats
کھیل

اسپاٹ فکسنگ غلطی نہیں جرم ہے، کھلاڑیوں کو کڑی سزا دی جائے، محمد حفیظ

لاہور: قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان محمد حفیظ نے کہا ہے کہ اسپاٹ فکسنگ غلطی نہیں جرم ہے، اس معاملے پر شروع سے ہی میرا مؤقف بہت اصولی ہے، فکسنگ کو ختم کرنے کے لیے ایسے فیصلے کیے جائیں کہ یہ کام دوبارہ نہ ہوسکے۔

لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے قومی کرکٹ ٹیم کے آل راؤنڈر نے کہا کہ کیریئر میں اونچ نیچ ہوتی رہتی ہے، انجری کے بعد کا وقت بہت مشکل تھا اور ان فٹ ہونے پر وطن واپس بھیج دیا گیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ کپتان بننے کے بعد اللہ نے عزت بخشی اور ٹیم ملیبرن میں میچ جیتا، طویل عرصے ٹیم سے باہر رہنے کے باعث آؤٹ آف فارم تھا اور ٹیم میں جگہ بنانے میں مشکلات کا سامنا رہا، پی ایس ایل میں کھیل کر میرا اعتماد دوبارہ بحال ہوا اور اب میں اچھے کھیل سے اپنی کارکردگی سے ثابت کروں گا۔

محمد حفیظ نے کہا کہ افسوسناک بات ہے کہ 5 سال سے ٹیم کی پوزیشن مستحکم نہیں ہوسکتی اور ٹیم پانچویں، چھٹے نمبر پر رہی، اظہر علی اچھے بیٹسمین ہیں مگر وہ ناکام ثابت ہوئے جس کی وجہ سے ہمیں بنگلہ دیش جیسی ٹیم نے بری طرح شکست دی، امید ہے کپتان کی تبدیلی کے بعد ٹیم اچھا کھیلے اور اور سرفراز احمد اچھے کپتان ثابت ہوں گے۔

آل راؤنڈر نے کہا کہ اظہر علی نے دو سال میں بیٹسمین کی حیثیت سے خود کو منوایا اور ٹیسٹ میچ میں بھی اُن کی کارکردگی بہت بہتر رہی تاہم ایک دو میچز یا سیریز سے کسی کھلاڑی کے ٹیلنٹ کا تعین نہیں کیا جاسکتا۔ سابق کپتان نے مزید کہا کہ جب تک مناسب سمجھوں گا پاکستان کے لیے کھیلوں گا، خواہش ہے ملک کے لیے عزت اور فٹنس کے ساتھ کھیلوں اور اپنی کارکردگی سے ٹیم کو فتح بھی دلوا سکوں۔

پی ایس ایل میں اسپاٹ فکسنگ پر محمد حفیظ نے کہا کہ اسپاٹ فکسنگ کا دوبارہ پاکستانی ٹیم سے منسلک ہونا افسوسناک ہے، میری نظر میں اسپاٹ فکسنگ غلطی نہیں بلکہ جرم ہے، اس معاملے پر ایسے سخت فیصلے کیے جائیں کہ آئندہ کھلاڑی ایسے گھناؤنے کام کرنے سے خوف کھائیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top