حج 2018: جنگ سے متاثرشامی بھائیوں کی 7 برس بعد سعودی عرب میں اچانک ملاقات
The news is by your side.

Advertisement

حج 2018: جنگ سے متاثرشامی بھائیوں کی 7 برس بعد اچانک ملاقات، رقت آمیز مناظر

ریاض: شام جنگ سے متاثر ہوکر 7 برس قبل بچھڑنے والے بھائیوں کی سعودی عرب میں اچانک ملاقات ہوئی جس کے دوران رقت آمیز مناظر دیکھنے میں آئے، دونوں بھائی حج ادا کرنے پہنچے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق دنیا بھر سے لاکھوں فرزندان اسلام حج کی ادئیگی کے لیے سعودی عرب پہنچ گئے جہاں وہ اسلام کا بنیادی رکن ادا کریں گے۔ عرب میڈیا کے مطابق اب تک دنیا کے مختلف ممالک سے 20 لاکھ کے قریب عازمین حج سعودی عرب پہنچے۔

شام جنگ سے متاثر ہوکر 7 برس قبل بچھڑنے والے دو سگے بھائی بھی فریضہ مقدس ادا کرنے کے لیے ایک روز قبل ریاض پہنچے جہاں اُن کی اچانک ملاقات ہوئی۔

مزید پڑھیں: غلاف کعبہ تیار، 9 ذی الحج کو تبدیل کیا جائے گا

دونوں بھائیوں کی 7 سال بعد اچانک ملاقات پر رقت آمیز مناظر دیکھنے کو ملے، اس موقع پر ایئرپورٹ پر موجود شہری نے جذباتی ملاقات کی ویڈیو بنائی جو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی۔

ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ جیسے ہی بھائیوں نے ایک دوسرے کو دیکھا تو وہ گلے لگے اور زاروقطار رونے لگے جبکہ اُن کی بیگمات بھی ایک دوسرے سے مل کر جذباتی ہوگئیں، اسی دوران انہیں دیکھنے والے بھی اپنے اشکوں کو نہ روک سکے۔

یاد رہے کہ سعودی عرب پہنچنے والے لاکھوں فرزندان اسلام حج کا رکن اعظم پیر 20 اگست کو ادا کریں گے اور اگلے روز یعنی  21 اگست کو وہ قربانی کرکے سر منڈوائیں گے اور پھر احرام بھی اتار سکیں گے۔

یہ بھی پڑھیں: ڈاکٹر حسین بن عبدالعزیزآل الشیخ خطبۂ حج دیں گے

دوسری جانب عرب میڈیا کے مطابق حرمین شریفین کی انتظامیہ نے ہرسال کی طرح امسال بھی خانہ کعبہ کے لیے نیا غلاف تیار کرلیا جو  9 ذی الحج بروز پیر کو اسے تبدیل کیا جائے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں