The news is by your side.

Advertisement

عالمی یوم آبادی کے موقع پر شہزادہ ہیری اور میگھن کو ایوارڈ

لندن: ایک برطانوی فلاحی ادارے نے شاہی خاندان چھوڑے نے والے جوڑے کو خاندان 2 بچوں تک محدود رکھنے کے فیصلے پر ایوارڈ سے نوازا۔

تفصیلات کے مطابق ’بچے دو ہی اچھے‘ کے فیصلے پر شہزادہ ہیری اور میگھن کو ایوارڈ مل گیا ہے، یہ ایوارڈ برطانوی فلاحی ادارے ’پاپولیشن میٹرز‘ کی جانب سے ہفتے کو اقوام متحدہ کے عالمی یوم آبادی کے موقع پر دیا گیا ہے۔

برطانوی میڈیا کا کہنا ہے کہ پرنس ہیری اور میگھن مارکل کو اپنی بچی للی بیٹ کی پیدائش کے بعد مزید بچے پیدا نہ کرنے کے سماج دوست فیصلے پر خصوصی ایوارڈ کے لیے منتخب کیا گیا، جوڑے کے ہاں رواں برس 4 جون کو بیٹی للی بیٹ ڈیانا ماؤنٹ بیٹن ونڈسر کی پیدائش ہوئی تھی۔

اس سے قبل 6 مئی 2019 کو اس جوڑے کے ہاں ایک بیٹا آرچی ہیریسن ماؤنٹ بیٹن ونڈسر پیدا ہوا تھا۔

مستحکم آبادی کے مقصد کے لیے کام کرنے والے برطانوی فلاحی ادارے نے اس جوڑے کو دوسرے خاندانوں کے لیے رول ماڈل قرار دیا، ادارے کے ترجمان نے کہا شہزادہ ہیری اور میگھن نے دو بچوں تک محدود رہنے کا علانیہ فیصلہ کر کے اپنے بچوں کے بہتر مستقبل کو یقینی بنانے کی کوشش کی ہے۔

جمعے کو پیدا ہونے والی شہزادہ ہیری کی بیٹی کا نام للی بیٹ کیوں رکھا گیا؟

ان کا کہنا تھا خاندان کو مختصر رکھنے سے کرۂ ارض پر اچھے اثرات مرتب ہوں گے، اس سے ہماری نسلوں اور ان کے بعد آنے والوں کے لیے ایک بہتر دنیا میں پھلنے پھولنے کے مواقع میسر آئیں گے۔

یاد رہے کہ 2019 میں ووگ میگزین سے گفتگو کرتے ہوئے شہزادہ ہیری نے اپنی فیملی کو دو بچوں تک محدود رکھنے کا ارادہ ظاہر کیا تھا، انھوں نے کہا تھا یہ زمین ایک عطیہ ہے، ہمیں اپنی آنے والی نسلوں کے لیے یہاں کچھ اچھا چھوڑ کر جانا چاہیے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں