The news is by your side.

Advertisement

کیا برطانیہ میں پھیلی ہوئی کورونا کی نئی قسم پنجاب پہنچ گئی؟

لاہور: محکمہ صحت پنجاب نے صوبے میں کوروناوائرس کی نئی قسم کے کیس رپورٹ ہونے کی تردید کردی۔

تفصیلات کے مطابق برطانیہ میں پھیلی ہوئی کورونا وائرس کی نئی قسم کے حوالے سے محکمہ صحت پنجاب نے کہا ہے کہ صوبے میں اس کیس کا مریض رپورٹ نہیں ہوا، برطانیہ سے آئے افراد کا کورونا پازیٹو آنے پر ان کے نمونے جین سیکونسنگ (gene sequencing) کے لیے این آئی ایچ بھجوائے جاتے ہیں۔

سیکرٹری پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئر کیپٹن ریٹائرڈ محممد عثمان نے بتایا کہ نجی ہوٹل میں کورونا پازیٹو آنے والی خاتون کی جین سیکیونسنگ (gene sequencing) نہیں ہوئی۔

انہوں نے کہا کہ بغیر جین سیکونسنگ کورونا وائرس کی قسم کو ڈکلئیر کرنا ممکن نہیں ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ضروری نہیں برطانیہ سے متاثر ہو کر آنے والے مریضوں میں نئی قسم کا وائرس ہو، جین سیکونسنگ کے نتائج آنے پر ہی پنجاب میں کورونا وائرس کی نئی قسم کی موجودگی کی تصدیق ہو سکے گی۔

برطانیہ سے آنے والے 3 مسافروں میں کرونا وائرس کی نئی قسم کی تصدیق

یاد رہے کہ 29 دسمبر کو محکمہ صحت سندھ نے برطانیہ سے آنے والے 12 میں سے 3 مسافروں میں کرونا وائرس کی نئی قسم کی تصدیق کی تھی۔ محکمہ صحت سندھ کا کہنا تھا کہ برطانیہ سے آنے والے 12 مسافروں میں سے 6 کرونا وائرس مثبت ہیں، 6 میں سے 3 کرونا مثبت کیسز نئے وائرس سے مشابہ ہیں۔

محکمہ کے مطابق وائرس جینو ٹائپنگ کی قسم سے بھی مشابہت رکھتا ہے جو برطانیہ میں سامنے آیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں