The news is by your side.

Advertisement

روزانہ اپنے سرکو لہولہان کرنے والا انسان، حیرت انگیز وڈیو دیکھیں

سیول : جنوبی کوریا کے دارالحکومت سیول میں ایک شخص روزانہ باقاعدگی سے اپنا سر زور سے ایک درخت پر مارتا ہے، چوٹ اتنی شدید ہوتی ہے کہ خون تیزی سے بہتا ہے لیکن تکلیف کے باوجود وہ اس عادت کو نہیں چھوڑتا۔

کبھی غلطی سے بھی اگر ہمارا سر اچانک کسی ٹھوس چیز سے ٹکرا جائے تو ہمیں اتنا شدید درد ہوتا ہے کہ اس کو برداشت کرنا مشکل ہوجاتا ہے جس کی وجہ سے دماغی صحت سے متعلق پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔

جنوبی کوریا میں ایک شخص روزانہ کچھ ایسا کام کرتا ہے جس کو دیکھنے والے حیرت میں مبتلا ہوجاتے ہیں، چپلوں کی مرمت کرنے والا یہ صحت مند شخص گزشتہ پانچ سالوں سے ہرروز ایک درخت پر اپنا سر زور زور سے ٹکراتا ہے۔

شہر کی سڑک سے متصل اس شخص کی ایک چھوٹی سی موچی کی دکان ہے جہاں سے وہ روز اپنی دکان سے نکل کر پاس ہی ایک درخت کے نزدیک جاکر اس پر اپنا سر زور زور سے مارنا شروع کردیتا ہے اتنا ہی نہیں اس کے بعد وہ اپنا کندھا اور جسم بھی درخت سے ٹکراتا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق پہلی مرتبہ دیکھنے والے لوگ اس شخص کو پاگل سمجھتے ہیں لیکن ایسا نہیں ہے،  اپنا سر روزانہ درخت پر مارنےکی وجہ سے اس کی پیشانی پر گہرا زخم ہوچکا ہے مگر لوگوں کے سمجھانے کے باوجود وہ اس سے باز نہیں آتا۔

درخت پر سر پٹخنے کے بعد یہ شخص اپنی دکان میں واپس آکر زخموں پر مرہم لگاتا ہے، اس کی پیشانی اسی وجہ سے سیاہ ہوچکی ہے اور زخم بھی نہیں بھرپاتا کہ اگلے دن پھر اسی طرح کا عمل کرتا ہے۔

اس حوالے سے اس شخص کا کہنا ہے کہ یہ اس کی روز کی ٹریننگ ہے کیونکہ جب وہ نوجوان تھا تب وہ ایک علاقائی باکسر تھا مگر گھر کی ضروریات کو پورا کرنے کی وجہ سے اس کو باکسنگ کریئر چھوڑنا پڑا۔

اس نے مزید بتایا کہ اس کے مالی حالات بھی اچھے نہیں تھے اس کے پاس نہ تو اتنے پیسے تھے اور نہ ہی اتنا وقت تھا کہ وہ باکسنگ پریکٹس کرنے کیلئے جم جاسکے، اس لئے اس کو ٹریننگ کرنے کا یہی ایک خاص طریقہ سمجھ میں آیا۔

اس بتایا کہ اس دن سے آج تک وہ روزانہ اپنے سر اور جسم کو درخت سے ٹکراتا ہے تاکہ اس کا سر مضبوط رہے اور لوگوں کو یہ پتہ رہے کہ وہ ابھی بھی فارم میں ہے، اس شخص نے مزید بتایا کہ وہ سر ٹکرانے کا عمل 65 سال کی عمر تک جاری رکھے گا اور پھر چھوڑ دے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں