The news is by your side.

Advertisement

پریشان اور فکر مند رہنے والے افراد ہوشیار

مثبت خیالات زندگی کو آسان بنا دیتے ہیں اور حال ہی میں ایک تحقیق سے علم ہوا کہ یہ آپ کی عمر بھی لمبی کرسکتے ہیں۔

بوسٹن یونیورسٹی کی ایک تحقیق میں علم ہوا کہ رجائیت پسند افراد قنوطی افراد کی نسبت زیادہ عرصہ زندہ رہتے ہیں اور صحت مند زندگی گزارتے ہیں کیوں کہ ان کے پاس نمٹنے کے لیے کم پریشانیاں ہوتی ہیں۔

تحقیق کی سربراہ ڈاکٹر لیوینا لی کا کہنا تھا کہ دباؤ ہماری صحت پر منفی اثرات مرتب کرنے کے لیے جانا جاتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ یہ دیکھتے ہوئے کہ آیا رجائیت پسند افراد روز بروز مختلف انداز میں دباؤ سے کس طرح نمٹتے ہیں، حاصل ہونے والے نتائج نے معلومات میں اضافہ کیا کہ کس طرح رجائیت پسندی بڑھتی عمر کے لوگوں میں اچھی صحت کو فروغ دے سکتی ہے۔

اگرچہ پچھلی تحقیق میں رجائیت پسندی اور صحت مندی کے ساتھ عمر بڑھنے کے درمیان تعلق پایا گیا تھا لیکن اب تک یہ بات مبہم تھی کہ رجائیت پسندی کے صحت پر اثرات کیسے ہوسکتے ہیں۔

ڈاکٹر لی نے مزید بتایا کہ اس تحقیق نے ایک ممکنہ وجہ کو پرکھا، یہ دیکھا گیا کہ اگر زیادہ رجائیت پسند افراد روزمرہ کے دباؤ کو تعمیری انداز میں لیتے ہیں، لہٰذا وہ بہتر جذباتی صحت سے لطف اندوز ہوتے ہیں۔

اس نئی تحقیق میں ماہرین کی ٹیم نے 233 بزرگ مردوں کا 24 سال تک مطالعہ کیا، یہ تحقیق 1986 میں شروع کی گئی تھی جس میں مردوں نے ایک سوال نامہ پر کیا جس سے ان کے اندر موجود رجائیت پسندی کو پرکھا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں