The news is by your side.

Advertisement

فیصل ایدھی کی کشتی سمندر میں کیسے ڈوبی، اور کون سوار تھا؟

کراچی: آج شہر قائد میں دو دریا کے مقام پر لاپتا افراد کی تلاش میں نکلنے والے ایدھی رضاروں کی کشتی الٹنے کا واقعہ پیش آیا تھا، اس سلسلے میں فیصل ایدھی نے تفصیلات بتاتے ہوئے کہا اچانک انجن بند ہونے سے حادثہ پیش آیا تھا۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق فیصل ایدھی نے واقعے کے بارے میں بتایا کہ وہ رضاکاروں کے ساتھ ملیر ندی کے اطراف میں لاپتا 8 افراد کی تلاش کر رہے تھے، سی ویو کی جانب سے واپس آنے لگے تو کشتی کا انجن بند ہو گیا۔

انھوں نے بتایا سمندر کی تیز لہروں کے باعث ہماری کشتی الٹ گئی، کشتی میں ہمارے ساتھ صوبائی اسمبلی کے رکن راجہ اظہر بھی تھے، 5 دیگر افراد بھی کشتی پر سوار تھے۔

فیصل ایدھی کا کہنا تھا کہ ان سب نے چوں کہ لائف جیکٹ پہن رکھی تھی اس لیے وہ نہیں ڈوبے، تاہم آدھے گھنٹے تک وہ سمندر میں تیرتے رہے، اس دوران ابراہیم حیدری سے آنے والی ماہی گیروں کی کشتی نے انھیں ریسکیو کیا۔

کراچی: سی ویو کے قریب کشتی الٹ گئی، فیصل ایدھی سمیت 6 افراد کو بچا لیا گیا

واضح رہے کہ آج ایدھی فاؤنڈیشن کے سربراہ فیصل ایدھی بال بال بچ گئے، فیصل ایدھی کورنگی کاز وے پر ڈوبنے والے افراد کی تلاش میں نکلے تھے، اس دوران ان کی کشتی کاز وے سے ریسکیو آپریشن کرتے ہوئے دو دریا کی سمت نکل گئی۔

ایدھی حکام کا کہنا تھا کہ دو دریا کے قریب فیصل ایدھی کی کشتی تیز پانی کی وجہ سے پلٹ گئی، قریب سے گزرنے والے ماہی گیروں نے فیصل ایدھی کو ریسکیو کیا، واقعے کے بعد فیصل ایدھی کو ابراہیم حیدری جیٹی منتقل کیا گیا۔

ادھر کشتی میں موجود پی ٹی آئی کے رکن سندھ اسمبلی راجہ اظہر کا جناح اسپتال میں طبی معائنہ کیا گیا، پی ٹی آئی کراچی کا کہنا ہے کہ ڈاکٹر نے راجہ اظہر کی صحت کو تسلی بخش قرار دیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں