The news is by your side.

Advertisement

ابوظبی: بھارتی شہری کا فراڈ، پاکستانی کروڑ پتی شخص کباڑ کا کام کرنے پر مجبور

ابوظبی: متحدہ عرب امارات میں مقیم پاکستانی کروڑ پتی شخص نے بھارتی شہری کے فراڈ کے سبب کباڑ کا کام شروع کردیا۔

عرب میڈیا کے مطابق 2008 پاکستانی شہری اصغر حسین کی زندگی تب بدل گئی جب ایک بھارتی جعل ساز نے ان سے ایک لیگل کمپنی کے کاغذات پر دھوکے سے دستخط کروالیے اور وہاں سے فرار ہوگیا جبکہ اصغر حسین نے پانچ لاکھ درہم جرمانہ ادا کرنے کے بعد کباڑ کا کام شروع کردیا۔

عدالت نے فرار ہونے والے شخص کو 5 پیشیوں میں مسلسل غیر حاضری کی وجہ سے پانچ سال قید اور جلاوطنی کی سزا سنادی۔

اصغر حسین ان کی اہلیہ فرح گل اور چار بچوں کو اس عرصے میں بہت سی دشواریوں کا سامنا رہا، 2013 تک اصغر حسین بینک کے قرض ادا کرنے سے قاصر تھے اور 2014 میں ان کے بچوں کو اسکول کی فیس ادا کرنے کے باعث نکال دیا گیا تھا جو اب تک تعلیم حاصل کرنے سے قاصر ہیں۔

اصغر حسین جو پُرآسائش گھر میں رہتے تھے اب ایک چھوٹے سے کمرے میں رہنے پر مجبور ہیں۔

پاکستانی شہری کی اہلیہ فرح گل نے کہا کہ میرے بچے تقریباً پانچ سال سے اسکول نہیں گئے، وہ اسکول جانے کے لیے بہت بے تاب ہیں جب وہ دوسرے بچوں کو اسکول جاتا دیکھتے ہیں تو سوال کرتے ہیں کہ ہم کب اسکول جائیں گے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق اصغر حسین ابھی عارضی طور پر کباڑ کا کام کرتے ہیں ان کے ساتھ ان کا بڑا بیٹا بھی لیبر کا کام کرتا ہے جو بمشکل ماہانہ 500 درہم کما پاتے ہیں۔

واضح رہے کہ یو اے ای میں مختلف سماجی تنظیموں کی جانب سے مستحق افراد کی مدد کی جاتی ہے تاہم اصغر حسین اہل خانہ کے ہمراہ کافی عرصے سے غیرقانونی طور پر رہائش پذیر تھے جس کے سبب سماجی تنظیموں نے ان کی مدد کرنے سے انکار کردیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں