The news is by your side.

Advertisement

شوگر لیول کو کیسے قابو میں رکھا جاسکتا ہے؟

دنیا بھر میں ذیابیطس کے مریضوں میں اضافہ ہوتا جارہا ہے، ماہرین شوگر کے مریضوں کی آسانی کے لیے کچھ تجاویز بتاتے ہیں جس سے ان کا شوگر لیول کم رہے گا اور وہ بھرپور زندگی گزار سکیں گے۔

ماہر غذائیات کے مطابق ذیابیطس کے مریضوں کا ایک ہی ہدف ہونا چاہیئے کہ شوگر لیول کو کسی طرح سے قابو میں رکھا جائے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ اگرچہ غذا کا کوئی ایسا فارمولہ نہیں ہے جو سب کے لیے کارآمد ثابت ہو تاہم کچھ چیزوں کو مدنظر رکھنا لازمی ہے۔

ذیابیطس میں مبتلا ہر شخص کی کوشش ہونی چاہیئے کہ وہ اپنی غذا میں زیادہ سے زیادہ فائبر کا استعمال کرے، جن اشیا میں فائبر بھرپور مقدار میں موجود ہے ان میں اجناس، دالیں، خشک میوہ، بیج، پھل اور سبزیاں شامل ہیں۔

ذیابیطس کے مریضوں میں کاربو ہائیڈریٹ کی مقدار خون میں موجود شوگر لیول کے تناسب کو خراب کر سکتی ہے۔ اسی لیے ایسے مریضوں کو مشورہ دیا جاتا ہے کہ وہ روزانہ کی بنیاد پر ایک خاص مقدار میں کاربو ہائیڈریٹ کا استعمال کریں۔

کھانا کھانے کے طور طریقے اور اوقات میں تبدیلی لانا لازمی ہے، کچھ لوگوں کو یقیناً ایک ہی مرتبہ پیٹ بھر کر کھانے کی عادت ہوگی لیکن دن میں تین بار کھانے کے بجائے چار سے پانچ مرتبہ کھا لیں لیکن تھوڑا تھوڑا۔

شوگر کے مریضوں کو ویسے ہی میٹھے سے دور رہنے کا مشورہ دیا جاتا ہے لیکن میٹھے کی کمی کو پھلوں سے مکمل کیا جا سکتا ہے۔ تھوڑی مقدار میں جامن، سٹرابیری، انار،
امرود اور بیر کھانے میں کوئی حرج نہیں ہے۔

روزانہ 30 سے 40 منٹ کی ورزش کرنا لائف اسٹائل کا حصہ ہونا چاہیئے، یہ اتنا ہی ضروری ہے کہ جیسے کھانا پینا یا سونا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں