The news is by your side.

Advertisement

انسانی لائبریری میں جیتی جاگتی کتابیں

لائبریری یا کتب خانے میں جانا، وہاں بیٹھ کر کتابیں پڑھنا اور وقت نہ ہونے کے باعث ان کتابوں کو مستعار گھر لے آنا، اور پھر پڑھ کر واپس کردینا تو ایک عام سی بات ہے، لیکن کیا آپ نے جیتی جاگتی کتابیں دیکھی ہیں جو خود آپ کو اپنی کہانی سنائیں؟

سننے میں حیران کن بات لگتی ہے، مگر کئی مغربی ممالک میں اب ایسے ہی کتب خانوں کا رواج فروغ پا رہا ہے جسے انسانی کتب خانے یا ہیومن لائبریری کا نام دیا جاتا ہے۔

یہ لائبریری عام کتب خانوں سے ہٹ کر ہے۔ یہاں انسان، کتابوں کی صورت آپ کا استقبال کریں گے اور اپنے تجربات سنا کر آپ کے علم اور مشاہدے میں اضافہ کریں گے۔

library-2

ان کتابوں سے آپ سوالات بھی کر سکتے ہیں۔ آخر ہیں تو یہ انسان، جیتے جاگتے، ہنستے روتے انسان۔

ان کتب خانوں میں مختلف حوالہ جات سے کتابوں (انسانوں) کی درجہ بندی کی جاتی ہے۔

مزید پڑھیں: 100 سال قدیم تھیٹر عظیم الشان کتاب گھر میں تبدیل

مثال کے طور پر اگر آپ کسی پناہ گزین کے بارے میں معلومات چاہتے ہیں، تو آپ کو کسی ایسے شخص کے ساتھ بٹھا دیا جائے گا جو خود پناہ گزین ہوگا۔

library-4

اسی طرح یہاں مختلف بیماریوں جیسے ایڈز یا آٹزم کا شکار، بے روزگار، زیادتی اور تشدد، تنہائی، ذہنی امراض اور زندگی کے دیگر تلخ تجربے سہنے والے افراد آپ کے منتظر ہوں گے کہ آپ آئیں اور وہ آپ کو اپنی زندگی کی کہانی سے آگاہ کریں۔

یہاں آپ مختلف شعبہ جات سے تعلق رکھنے والے افراد سے بھی مل کر اس شعبہ کی زندگی کے بارے میں جان سکتے ہیں۔

library-3

library-5

یہاں داخلے کا طریقہ کار بھی عام لائبریریوں جیسا ہے۔ آپ لائبریری میں چیک ان کرتے ہیں، وہاں موجود افراد کے مختصر تعارف میں اپنی دلچسپی کے موضوع کا انتخاب کرتے ہیں جس کے بعد لائبریرین آپ کو آپ کی مطلوبہ ’کتاب‘ سے ملوا دیتا ہے۔

لائبریری میں وقت گزارنا یوں تو علم اور تجربے میں قیمتی اضافے کا سبب بنتا ہے، لیکن اس طرح کی لائبریری میں وقت گزارنا یقیناً ایک شاندار تجربہ ہوگا۔ آپ کا کیا خیال ہے؟


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں