The news is by your side.

Advertisement

ہنگری کا یوکرین کو انکار

بڈاپسٹ: ہنگری نے یوکرین کو اپنی سر زمین سے ہتھیاروں کی فراہمی سے انکار کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ہنگری کے وزیر اعظم وکٹر اوربان نے پیر کو ایک حکم نامے پر دستخط کیے ہیں جس میں نیٹو فوجیوں کو ملک میں تعینات رہنے کی اجازت دی گئی ہے۔

تاہم وزیر اعظم ہنگری نے ہنگری کے راستے یوکرین کو ہتھیاروں کی فراہمی پر پابندی عائد کرتے ہوئے سپلائی پر پابندی کے حکم نامے پر دستخط کر دیے۔

حکم نامے میں وضاحت کی گئی ہے کہ یہ فیصلہ اپنے ملک کی سلامتی کے دفاع کے لیے ناگزیر ہے، موجودہ حالات میں ہمیں اپنے ملک اور قوم کا مفاد زیادہ عزیز ہے۔

ہنگری کے وزیر اعظم نے کہا کہ یہ حکم یوکرین کی صورت حال کا جائزہ لینے کے بعد جاری کیا گیا ہے، جیسا کہ فوجی کارروائیاں ہنگری کی سرحد کے قریب سے قریب تر ہوتی جا رہی ہیں، اور ہم اپنے ملک کو اس جنگ کا حصہ نہیں بنانا چاہتے۔

رپورٹس کے مطابق ہنگری نے پالیسی میں تبدیلی کر لی ہے، جس کے مطابق ہتھیاروں کی ترسیل نیٹو کے دیگر رکن ممالک کے ذریعے ہوگی، اور ہنگری مہلک ہتھیاروں کی براہ راست یوکرین کو منتقلی کی اجازت نہیں دے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں