The news is by your side.

Advertisement

بوڑھے شوہر نے جوان بیوی کو زندہ دفن کردیا

خانیوال: پنجاب کے شہر خانیوال  کے علاقے چھب کلاں میں عمر رسیدہ خاوند نے  نوجوان بیوی کو گھر کے صحن میں زندہ دفن کردیا، بچے کو قبرستان میں زندہ پھینک آیا ۔

تفصیلات کے مطابق  خانیوال کے علاقے چھب کلاں کے نواحی گاؤں 59 پندرہ ایل میں20سالہ لڑکی اپنے 48 سالہ خاوند کی وحشت کا شکار ہوگئی ۔ شوہر نے بیوی کو تشدد کرکے گھر کے صحن میں زندہ دفن کردیا اور  اپنے ڈیڑھ سالہ بچے کو لاوارث قبرستان میں چھوڑدیا  ۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ حبیب قمر نے اپنے سے آدھی عمر کی دوسری بیوی کو گھر کے صحن میں زندہ دفن کردیا ، 20 سالہ مقتولہ خورشید بانو کے اہل خانہ کے مطابق کئی روز سے ہماری بیٹی کے ساتھ فون پر رابطہ نہیں ہورہا تھا، اچانک اس کے خاوند کی کال آئی کہ خورشید بانو کو قتل کرکے لاش گھر کے صحن میں ہی دفنادی ہے۔

 اہل خانہ کی اطلاع پر پولیس نے گھر کو قبضہ میں لے کر صحن کی کھدائی کرکے لاش نکال کر تحصیل اسپتال میاں چنوں منتقل کردی۔ ادھر ظالم خاوند نے گزشتہ روز اپنے ڈیڑھ سالہ بچے کو تیار کرکے اس کے کپڑے وغیرہ بیگ میں ڈال کر  گاوں کے قبرستان میں لاوارث چھوڑ دیا ۔

مقتولہ خورشید بانو کا تعلق تحصیل عارف والا سے تھا اور وہ حبیب قمر کی دوسری بیوی تھی مقتولہ کے خاندانی ذرائع کے مطابق اس کا خاوند چھوٹی چھوٹی باتوں پر تشدد کرتا تھا جبکہ پولیس کے مطابق ملزم کو گرفتار کرنے کے لیے چھاپہ مار ٹیمیں کوشش کررہی ہیں۔ پوسٹ مارٹم کے بعد مقدمہ درج کرلیا جائے گا۔

دوسری جانب شیخوپورہ میں گھریلو جھگڑوں کی بنا پر چھ مہینے قبل بیاہی گئی 18 سالہ لائبہ بی بی کو بدترین تشدد کرکے قتل کردیا گیا۔ پولیس نے نعش بغیر پوسٹ مار ٹم کے ورثاء کے حوالے کردی اور زور ڈال کر زبردستی جلدی تدفین کرادی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں