The news is by your side.

Advertisement

سابق برطانوی وزیر اعظم کا عراق، افغانستان پر حملے کے حوالے سے بڑا اعتراف

لندن: بڑی دیر کی مہرباں آتے آتے، سابق برطانوی وزیر اعظم ٹونی بلیئر نے اعتراف کر لیا ہے کہ ہو سکتا ہے کہ وہ عراق اور افغانستان پر حملوں کے حوالے سے غلط ہوں۔

تفصیلات کے مطابق سابق برطانوی وزیر اعظم ٹونی بلیئر نے بی بی سی ریڈیو فور کو انٹرویو میں اعتراف کیا کہ وہ عراق اور افغانستان کے بارے میں غلط ہو سکتے ہیں لیکن ساتھ ہی سابق امریکی صدر جارج ڈبلیو بش کے عراق اور افغانستان پر حملوں کے فیصلوں کا دفاع بھی کیا۔

انھوں نے کہا عراق اور افغانستان پر ہو سکتا ہے کہ میں غلط ہوں، لیکن وہی کیا جو صحیح لگا، ٹونی بلیئر کا یہ بھی کہنا تھا کہ صحیح ہونا یا نہ ہونا الگ بات ہے، بڑے فیصلوں میں معلوم نہیں ہوتا کہ اس میں شامل تمام عناصر کیا ہیں، اور آخر کار آپ کو اپنی جبلت کی پیروی کرنی ہوتی ہے۔

ایک سوال پر ٹونی بلیئر کا کہنا تھا کہ یہ سیاسی رہنما کا کردار نہیں کہ وہ دنیا بھر میں برائی کو جڑ سے اکھاڑ پھینکیں۔

یوکرین کے معاملے پر انھوں نے انٹرویو میں کہا کہ یوکرین یورپ کی دہلیز پر ایک آزاد خود مختار ملک ہے، اس پر حملہ اور قبضہ بڑے پیمانے پر ہمارے مفادات کے خلاف ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں