The news is by your side.

Advertisement

قازقستان میں ’برف کے آتش فشاں‘ نے دنیا کو حیران کر دیا

الماتے: وسطی ایشیا کے ملک قازقستان کے شہر الماتے میں قدرتی طور پر بننے والے ’برف کے آتش فشاں‘ نے دنیا کو حیران کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق قازقستان کے الماتے ریجن میں حیرت انگیز 45 فٹ کا ’آئس آتش فشاں‘ تعمیر ہو گیا ہے، جسے دیکھنے کے لیے ہزاروں کی تعداد میں لوگ آ رہے ہیں۔

قدرتی طور پر تشکیل پانے والے اس عجیب و غریب آئس آتش فشاں کی جھلک دیکھنے کے لیے لوگ سخت موسمی حالات میں بھی الماتے کا دورہ کر رہے ہیں۔

زمین سے مسلسل پانی پھوٹنے کی وجہ سے مذکورہ مقام پر برف کا پھسلواں تختہ بھی بن چکا ہے، اگرچہ یہ ایریا اب سردیوں کا تعجب خیز مقام بن چکا ہے تاہم گرمیوں کے دوران یہاں ہر طرف سبزہ بھی پھیل جاتا ہے۔

یہ منجمد ڈھانچا دراصل 45 فٹ اونچائی میں ہے اور یہ ایک زیر زمین چشمے کے اوپر تشکیل پایا ہے جس سے پانی فوارے کی طرح نکلتا تھا، اور فوراً ہی جم جاتا تھا، جس کی وجہ سے وہاں کون کے ڈیزائن میں ’برف کا آتش فشاں‘ بن گیا۔

زیر زمین چشمے کا یہ مقام قازقستان کے دارالحکومت نور سلطان سے چار گھنٹوں کی دوری پر واقع ہے۔ گزشتہ برس بھی یہاں ایک چھوٹا سا برفیلا آتش فشاں بن گیا تھا، لیکن یہ والا زیادہ واضح ہے اور دل چسپ بات یہ ہے کہ اب بھی اس کے دہانے سے چھینٹے اڑ کر نکلتے ہیں، تو ایسا ہی لگتا ہے جیسے آتش فشاں ہو۔

لوگ اس کی دل چسپ تصاویر بھی سوشل میڈیا پر شیئر کرنے لگے ہیں۔ واضح رہے کہ گزشتہ برس امریکا کی ریاست مشی گن کی مشہور جھیل میں بھی ایسا ’آتش فشاں‘ بن گیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں