The news is by your side.

Advertisement

بروقت اقدامات نہ اٹھائے تو زرعی معیشت تباہ ہوجائےگی، صوبائی وزیر زراعت

کراچی : سندھ حکومت نے ٹڈی دل کے حملے سے بچنے کےلیے زرعی ایمرجنسی ادارہ بنانے پر غور شروع کردیا ہے، وزیر زراعت نے کہا کہ سندھ حکومت مشکل حالات میں صوبے کے کاشتکاروں کو تنھا نہیں چھوڑے گی۔

تفصیلات کے مطابق سندھ حکومت نے ٹڈی دل کے حملوں سے بچنے کےلیے وزیر زراعت کی سربراہی میں زرعی ایمرجنسی ادارہ بنانے پر غور شروع کردیا ہے جس کے ذریعے زراعات کو بچایا جاسکے، وزیر زراعت اسماعیل راؤ کا کہنا ہے کہ اس وقت بڑے پیمانے پر بلوچستان سے ٹڈی دل سندھ پہنچ رہی ہے۔

اسماعیل راؤ کا کہنا ہے کہ سندھ کے 15 اضلاع میں ٹڈی دل کے حملے, بلوچستان میں فضائی اسپرے کرایا جاتا تو صوبے میں ٹڈی دل نہ آتی, سندھ کے 15 اضلاع ٹڈی دل کی وجہ سے سخٹ متاثر ہوئے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ وفاق کو کئی بار مدد کےلیے پکارا لیکن کہا گیا کہ آپ بات بڑھا چڑجا کر پیش کررہے ہیں، ٹڈی دل نے سندھ کی زرعی زمینوں پر سبزیوں کی کاشت کو تباہ کردیا ہے۔

اسماعیل راؤ نے کہا کہ کپاس اور چاول کی آنے والی فصل بھی سخت متاثر ہوسکتی ہے، بروقت اقدامات نہ اٹھائے تو زرعی معیشت تباہ ہوجائے گی، گزشتہ روز ٹڈی دل کراچی بھی پہنچ گئی ہے, وفاق مدد کرنے کے لیے تیار نہیں۔

صوبائی وزیر زراعت نے کہا کہ سندھ حکومت ٹڈی دل کے لیے مزید فور وہیل گاڑیاں اور اسپرے کے لیے سامان خریدے گی۔

ٹڈی دل کا خاتمہ، ترکی پاکستان کی مدد کو میدان میں آگیا

خیال رہے کہ ملک میں ٹڈی دل کے خاتمے کی پاکستانی حکومت کی کاوشوں کو مزید تقویت دینے کے لیے برادر ملک ترکی نے اپنی خدمات حکومت پاکستان کو فراہم کر دیں۔

ٹڈی دل کے خاتمے کے لیے فضائی اسپرے کرنے والا طیارہ پاکستان پہنچ گیا، اسپریئر طیارہ ترکی سے سی ون 30 کے ذریعے پاکستان لایا گیا ہے، طیارہ 6 ماہ کے لیے کرائے پر حاصل کیا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں