اخوان المسلمون نے مسلمانوں کو نقصان پہنچایا، ان کے خلاف شواہد موجود ہیں: سعودی عرب
The news is by your side.

Advertisement

اخوان المسلمون نے مسلمانوں کو نقصان پہنچایا، ان کے خلاف شواہد موجود ہیں: سعودی عرب

ریاض: سعودی وزیر برائے مذہبی امور ڈاکٹر شیخ عبد الطیف نے کہا ہے کہ اخوان المسلمون نے اسلام اور مسلمانوں کو نقصان پہنچایا، دہشت گردی میں ملوث ہونے کے شواہد بھی موجود ہیں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا، ڈاکٹر شیخ عبد الطیف کا کہنا تھا کہ اخوان المسلمون نے سعودی عرب میں بھی بغاوت کے بیج بونے کی کوشش کی لیکن ناکام رہے۔

انہوں نے کہا کہ ان کے خلاف ثبوت موجود ہے کہ یہ کس طرح دوسرے ممالک میں تخریبی کارروائیاں کرتے تھے، سعودی عرب کو اللہ پاک نے محفوظ رکھا۔


القاعدہ کے سربراہ ڈاکٹر ایمن الظواہری اخوان المسلمون کے حق میں سامنے آگئے


سعودی وزیر برائے مذہبی امور کا کہنا تھا کہ ہمارے علماء اور دانشور قیادت شہریوں کے ساتھ یکجا اور متحد رہے جس کی بدولت ہم استحکام اور اتحاد کی جانب آگے بڑھنے میں کامیاب رہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ اخوان المسلمون نے قرآن وسنت کے منافی انتہا پسندانہ نظریات کی تبلیغ کی اور سخت گیر نقطہ نظر کی تشہیر کی، اور لوگوں کو انتہا پسندی پر اکسایا اور انھیں نقصان پہنچایا۔

دوسری جانب گذشتہ ماہ ایک مصری عدالت نے کم از کم 75 افراد کو موت کی سزا سنائی تھی جن میں اخوان المسلمون کے اعلیٰ سطح قیات کے متعدد رکن بھی شامل ہیں، ان افراد کو پانچ سال قبل ایک دھرنے میں شریک ہونے کے بعد پرتشدد حالات پیدا کرنے کے الزامات کا سامنا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں