rangers غیرقانونی تعمیرات کےخلاف آپریشن کے لئے رینجرز کی مدد طلب
The news is by your side.

Advertisement

غیرقانونی تعمیرات کےخلاف آپریشن کے لئے رینجرز کی مدد طلب

کراچی : کے ڈی اے کی دس کھرب روپے کی زمین پر قبضہ چھڑانے کیلئے رینجرز سے مدد مانگ لی گئی، کے بی سی اے کے ڈائریکٹر نے ڈی جی رینجرز کو خط لکھ دیا۔

تفصیلات کے مطابق شہر قائد قبضہ مافیا کی جنت بن گیا ہے، کراچی میں سرکاری پلاٹس بھی محفوظ نہ رہے۔ قبضہ گروپ نے کے ڈی اے کی دس کھرب روپے کی زمینیں بیچ ڈالیں۔

بارہ ہزار کمرشل اوررہائشی پلاٹس بھی ٹھکانےلگادیئے گئے، سرجانی ٹاؤن، کورنگی، نارتھ کراچی، نارتھ ناظم آباد کے علاقوں میں اراضی فروخت کی گئی، گلشن ٹاؤن اور ناظم آباد بھی قبضہ مافیا کے نشانے پر رہا۔

ذرائع کے مطابق کراچی ڈیولپمنٹ اتھارٹی کی چار سو ایکڑ زمین پر قبضہ کیا گیا ہے۔ ان پلاٹس کو چائنہ کٹنگ کرکے کوڑیوں کے دام بیچا گیا۔

سیاسی جماعتوں نے بھی بہتی گنگا میں خوب ہاتھ دھوئے۔ تمام زمینوں کےریکارڈ کو کے ڈی اے کے مختلف محکموں نے مرتب کرلیا، قبضہ مافیا سے اراضی واگزار کرانے اور غیرقانونی تعمیرات کےخلاف آپریشن کے لئے رینجرز کی مدد بھی طلب کر لی گئی ہے۔

کراچی بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی نے ڈی جی رینجرزکو خط لکھ کر اسکیم تینتیس اور گلشن اقبال میں غیرقانونی تعمیرات کےخلاف آپریشن کیلئے مدد کی درخواست کی ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں