The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب: غیر قانونی مقیم پاکستانی بدنامی کا باعث ہیں، وزارت خارجہ

اسلام آباد: وزارت خارجہ نے کہا ہے کہ سعودی عرب میں غیر قانونی طور پر مقیم پاکستانی رسوائی کا سبب بن رہے ہیں، صرف جدہ سے ہر سال 40 ہزار پاکستانیوں کو ملک بدر کیا جاتا ہے۔


اسی سے متعلق: سعودی عرب میں 780 پاکستانی قید ہیں،دفتر خارجہ


یہ بات وزارت خارجہ کے افسران نے قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے اوورسیز کو بریفنگ دیتے ہوئے کہی۔

قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے اوورسیز کا اجلاس عائشہ سید کی زیر صدارت منعقد ہوا جس میں مختلف معاملات پر بات کی گئی اور کمیٹی کو کئی امور پر وزارت خارجہ، امیگریشن، محکمہ اوورسیز اور دیگر کی جانب سے بریفنگ بھی دی گئی۔

اجلاس میں وزارت خارجہ نے بتایا کہ انسانی اسمگلرز کے خلاف کارروائی کے لیے وزارت داخلہ کو خط لکھا، سعودی عرب میں بڑی تعداد میں غیر قانونی طور پر پاکستانی مقیم ہیں،صرف جدہ سے سالانہ 40 ہزار سے زائد پاکستانیوں کو ڈی پورٹ کیا جاتا ہے۔

حکام نے کہا کہ سعودی عرب میں غیر قانونی طور پر مقیم یہ پاکستانی ملک کی رسوائی کا سبب بن رہے ہیں۔

کمیٹی کو بریفنگ دی گئی کہ غیر قانونی اسمگلنگ میں ملوث پروموٹرز کے خلاف کارروائی جاری ہے، 36 پروموٹرز کے لائسنس منسوخ کرکے ان پر ایک کروڑ روپے جرمانہ عائد کیا گیا ہے۔

امیگریشن بیورو نے شرکا کو بتایا کہ ترکی میں پاکستانی لیبر کی ضرورت نہیں ہے۔

اوورسیز کے وزیر صدر الدین راشدی نے کہا ہے کہ پاکستان میں 7 لاکھ ہنر مند موجود ہیں، ضرورت پڑی تو ہنر مندوں کو بیرون ملک بھیجنے کے لیے تیار ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں