The news is by your side.

جب کال دوں گا تو اس کے بعد کوئی واپسی نہیں ہوگی، عمران خان

پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ اس ظلم کے خلاف نکلنے کے لئے قوم کو جلد کال دوں گا اور جب کال دوں گا تو اس کے بعد کوئی واپسی نہیں ہوگی۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین اور سابق وزیراعظم عمران خان نے ایڈورڈز کالج میں سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں بدترین مہنگائی ہے، قوم نیچے جا رہی ہے، بڑے بڑے ڈاکو ملک کا پیسہ چوری کرکے باہر لے گئے، ان چوروں کو این آراو دیا جارہا ہے جن کے اربوں روپے کے لندن میں فلیٹس ہیں، یہ ملک کو لوٹتے ہیں، بھاگ جاتے ہیں اور ڈیل کرکے دوبارہ آجاتے ہیں، ایسے چوروں کو یوں ہی بری کیا جاتا رہا تو یہ آپ کے مستقبل کے لیے خطرناک ہے، آنے والے دنوں میں تباہی کا راستہ آپ کے سامنے آرہا ہے۔

عمران خان نے کہا کہ 1100 ارب روپے کی چوری بھی معاف کی جا رہی ہے، انہوں نے اپنے لیے قانون بنایا ہے باہر سے آئی معلومات قابل قبول نہیں، آپ کے پیسے باہر لندن یا آف شور میں پڑے تھے تو آمدن میں 33 فیصد اضافہ ہوا ہے، جس کی آمدنی بڑھے تو اسی کی ذمے داری ہوتی ہے کہ بتائے پیسے کہاں سے آئے؟ لیکن انہوں نے اس قانون کو بھی تبدیل کردیا، نیب کو کہہ رہے ہیں تم ثابت کرو، یہ پاکستانیوں کو پیغام دے رہے ہیں کہ ڈاکا مارنا ہے تو بڑا ڈاکا مارو، کیونکہ بڑے ڈاکو آزاد اور چھوٹے چور پکڑے جائیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ جہاں طاقتور اور کمزور کے لیے الگ الگ قانون ہوں وہ قوم کبھی ترقی نہیں کرتی، جہاں انصاف نہیں ہوتا وہاں غربت ہوتی ہے، جب ظلم کے سامنے سر جھکاتے ہیں تو معاشرہ تباہ ہوجاتا ہے، پچھلے 5 ماہ میں جب سے یہ حکومت آئی ہے روپیہ 33 فیصد گرگیا ہے، قوم پر جو ڈاکا ڈالا جا رہا ہے یہ میں کبھی برداشت نہیں کروں گا، مجھے اکیلے بھی نکلنا پڑے تو میں ان کے خلاف نکلوں گا، مجھے کسی چیز کا خوف نہیں نہ جیل کا خوف ہے نہ اپنی جان کا، عوام کو بھی خوف نہیں ہونا چاہیے، کیونکہ کلمہ پڑھنے والے اللہ کے سوا کسی کے آگے نہیں جھکتے، آپ نے ہمیشہ انصاف کے ساتھ کھڑا ہونا ہے ظلم کا مقابلہ کرنا ہے۔

پی ٹی آئی چیئرمین نے کہا کہ وزیراعظم آفس سے جو آڈیو لیکس ہوئی ہیں، اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ ان کے پیٹ ابھی بھی نہیں بھرے ہیں، مریم داماد کیلئے پیسہ بنانے کی کوشش کر رہی ہیں اور شہبازشریف کہہ رہا ہے فکر نہ کرو اسحاق ڈار آئے گا تو پیسے بن جائیں گے، وزیراعظم آفس کی سیکیورٹی لیپس ہونے کا مطلب ہے کہ دشمنوں کے پاس ہماری حساس معلومات چلی گئی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں