The news is by your side.

Advertisement

دھماکوں سے ڈرنے والے نہیں، انتخابی مہم نہیں روکیں گے، عمران خان

دہشت گرد انتخابات ملتوی کروانا چاہتے ہیں، ہم نے آنے والی نسلوں کے لیے یہ میچ جیتنا ہے۔

صوابی، مردان: پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کا کہنا ہے کہ دہشت گرد انتخابات ملتوی کروانا چاہتے ہیں، دھماکوں سے ڈرنے والے نہیں، انتخابی مہم جاری رکھیں گے۔

ان خیالات کا اظہار انھوں نے خیبر پختونخوا کے ضلع صوابی میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کیا، انھوں نے کہا کہ شہید سراج رئیسانی محبّ وطن پاکستانی تھا، ملک کے خلاف بیرون ملک سے دہشت گردی کی سازش ہو رہی ہے، یہ لوگ چاہتے ہیں عوام باہر نہ نکلیں۔

صوابی کے بعد مردان میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ تحریک انصاف کا مردان میں مقابلہ اے این پی کے ساتھ ہے، گیم کا اصول ہے کہ مقابل کو کم زور نہ سمجھا جائے، ہم نے آنے والی نسلوں کے لیے یہ میچ جیتنا ہے۔

عمران خان نے کہا کہ سیاسی جماعتوں کے سربراہ کرپٹ ہوں تو کرپشن ختم نہیں ہوسکتی، زرداری کے ہوتے پی پی کرپشن ختم نہیں کرسکتی، نواز شریف کرپشن کا گاڈ فادر ہے، ڈیزل پرمٹ بیچنے والے بھی کرپشن ختم نہیں کرسکتے۔ کہا ’یہ پاکستانی تاریخ کا اہم ترین اور نظریاتی الیکشن ہے۔‘

پی ٹی آئی چیئرمین نے کہا ’ایم ایم اے 5 سال اقتدار میں رہی لیکن اسلام کے لیے کون سا کام کیا؟ میں نے 20 سال ملک سے باہر کمائی کی، پھر سب کچھ بیچ کر پاکستان لایا، میرا ایک روپیا بھی پاکستان سے باہر نہیں۔‘

عمران خان کا کہنا تھا کہ نواز شریف اور آصف زرداری کی وجہ سے ملک غربت کا شکار ہو چکا ہے، آصف زرداری بتائیں ملک سے باہر جائیدادوں کے لیے پیسا کہاں سے آیا، جو پیسا روزگار، اسپتالوں، بجلی اور پانی پر خرچ ہونا تھا وہ ان کے پاس ہے۔

مستونگ دھماکہ: عمران خان کا مستونگ جانے کا اعلان


انھوں نے کہا ’ملکی اداروں میں سفارشیوں کو بٹھانے اور ان کی کرپشن کی وجہ سے ملک کے قرضے میں اربوں روپے کا اضافہ ہوا، بجلی، آٹا، دودھ، گیس، چینی سمیت ضروری اشیا بے پناہ مہنگی ہوگئیں۔‘

عمران خان نے کہا ’کل کرپشن کے گاڈر فادر نواز شریف ہوائی جہاز سے اترے تو ایئر پورٹ پر سنّاٹا تھا، چھوٹے بھائی نے کہا تھا لاکھوں لوگ استقبال کریں گے، شہباز شریف خوش ہے کہ اب ان کی باری ہے لیکن الیکشن کے بعد 56 کمپنیوں کے کیس اور میٹرو منصوبے میں وہ بھی جلد بڑے بھائی سے جیل میں ملیں گے۔‘


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں