The news is by your side.

Advertisement

اقتدار میں آکر5 سال میں 50لاکھ گھر بنائیں گے، عمران خان

کراچی : پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کا کہنا ہے کہ اقتدار میں آکر5 سال میں 50لاکھ گھر بنائیں گے، منصوبہ مذاق نہیں ہم کر کے دکھائیں گے، ہر لیول پر کرپشن اور مافیا پر قابوپائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے آباد میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج پاکستان کا سب سے بڑا مسئلہ بے روز گاری ہے، ہم نے نوجوانوں کو نوکریاں نہ دیں تو ملک تباہی کی طرف جائے گا، نوجوانوں کی بڑی تعداد کو نوکریاں نہ ملیں تو نوجوان چوری اور منشیات کی طرف جائے گا، اگر نوجوانوں کو نوکریاں دینی ہیں تو اس کا سب سے بڑا ذریعہ ہاؤسنگ سیکٹر ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ سالانہ دس لاکھ سستے گھروں کی تعمیر آسان نہیں، یہ ایک بہت بڑا چیلنج ہے، پی ٹی آئی نے سالانہ دس لاکھ سستے گھر تعمیر کرنے کا چیلنج قبول کیا ہے، بلین ٹری سونامی پر ہمارا مذاق اڑایا گیا، آج ورلڈ بینک تسلیم کررہا ہے۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ پاکستان میں سوا کروڑ گھروں کی ڈیمانڈ ہے، اگر ہاؤسنگ پالیسی پر عمل درآمد ہوگیا تو یہ ملک میں معاشی انقلاب لے آئے گی، ہاؤسنگ پالیسی میں حائل رکاوٹوں کو دور کریں گے، پانچ سال کے دوران پچاس لاکھ گھر تعمیر کرنے کا انفراسٹرکچر ابھی پاکستان میں نہیں ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ جو بھی حکومت آئے گی اس پر مسائل کا پہاڑ ہوگا، ہاؤسنگ پالیسی پر عمل کیلئے بیرون ملک ماہرین سے بھی رجوع کردیا ہے, ہاؤسنگ پالیسی کے لئے بینکنگ سیکٹر کو بھی تبدیل کرنا ہوگا، ضیغم رضوی نے بہترین ہاؤسنگ پالیسی تیار کرکے دی ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ ہمیں بڑھتی ہوئی آبادی اورنوجوانوں کا فائدہ اٹھانا چاہیے، ہم نے ٹارگٹ سیٹ کیا ہے 5سال میں 50 لاکھ گھر تعمیرکریں گے، لوگوں کو خوش کرنے کے لئے نہیں، ہم نے اپنے آپ کو چیلنج کیا ہے۔

سربراہ تحریک انصاف نے کہا کہ کے پی میں پتہ چلا 2 ارب روپے کی غیرقانونی جنگلات کی کٹائی کی گئی، چھانگا مانگا میں بڑے درخت،چیچہ وطنی میں جنگلات کاٹے گئے، جنگلات کی کٹائی روکنےکی کوشش کی تو ٹمبر مافیا ہمارے سامنے تھا، جنگلات کی کٹائی روکنے کے دوران ٹمبر مافیا نے ہمارے 10اہلکار شہید کیے۔


مزید پڑھیں :  تیس سال سے باریاں لگانے والوں نے کراچی کو کچھ نہیں دیا،عمران خان


ان کا کہنا تھا کہ ہمیں آئندہ نسلوں کا سوچنا ہے، الیکشن کانہیں، جن کے منصوبے اشتہارات میں ہوں وہ ایسے منصوبے نہیں مانتے، کسی کمپنی کو نہیں بلایا کیا بلکہ دوسال محنت کرکے خود منصوبہ بنایا، پہلے دو سال مشکل تھے لیکن آج عالمی ادارے بھی تعریف کرتے ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ 50لاکھ گھرتعمیرکرنے کا منصوبہ مذاق نہیں ہم کرکےدکھائیں گے، ہاؤسنگ پروجیکٹ سے نوجوانوں کوروزگار ملے گا،غریب کو سستے گھر، 50 لاکھ گھر تعمیرکرنے سے روزگار ملے گا، جس کا فائدہ حکومت کو ہوگا۔

پی ٹی آئی چیئرمین کا کہنا تھا کہ حکومت کا کام ہونا چاہیے، پرائیویٹ سیکٹرکو سہولت دے، ملک میں معاشی انقلاب لانے کے لئے ہاؤسنگ پروجیکٹ ضروری ہے، حنیف مسرت آج لندن کے معروف بلڈر ہیں، حنیف مسرت کودعوت دی آئیں پاکستان میں آکرکام کریں۔

انھوں نے کہا کہ دو حکومتوں نے 10سالوں میں تباہ کیا ہے، ہمیں وہاں تبدیلی لانا ہوگی، 6 ہزار ارب سے 27 ہزار ارب پر قرضے لے کر گئے ہیں، ڈالر کی قیمت کو بڑھایا گیا، جس سے مہنگائی کا طوفان آیا، اداروں کو دوبارہ اپنے پاؤں پر کھڑا کرنا ہوگا، کرپشن کا خاتمہ کرنا ہوگا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ 50 لاکھ گھر بنانے کے لئے ون ونڈو آپریشن ہوگا،رکاوٹیں حکومت دورکرے گی، بینکنگ سسٹم کو سیٹ کرنا ہوگا،غریب آدمی کو کوئی قرض ہی نہیں دیتا، اکانومی پر توجہ دینا ہوگی ،اکانومی بہتر ہونے سے سرمایہ کاری آئے گی، ہمیں اس تباہی سے نکلنے کے لئے اپنے آپ کو بدلنا ہوگا۔

اسحاق ڈار کے حوالے سربراہ پی ٹی آئی نے کہا کہ اسحاق ڈارکی لندن سےایک تصویرآئی جب اسپتال کےبستر پر تھے، اسحاق ڈار خود تو جعلی بیمار بنے لیکن ملکی معیشت کو آئی سی یو میں پہنچادیا، اسحاق ڈار کی ایک تصویر پھر آئی، جس میں وہ سڑک پرگھوم رہے تھے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہمیں پاکستان کی معیشت کا حال بہترکرنا ہے، ہمیں ہر لیول پر کرپشن اور مافیا پر قابو پانا ہوگا، اقتدار میں آکر 5 سال میں 50 لاکھ گھر تعمیر کریں گے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں